دنیا کے عظیم مصور وان گوگ کی قیمتی پینٹنگ سنگر لارین میوزیم سے چوری

ایمسٹر ڈیمدنیا کےعظیم مصوراور پینٹر وان گوگ کی مشہور پینٹنگ ایک میوزیم سے چوری ہوگئی ہے جسے ایک اور میوزیم سے کچھ دنوں کےلیے مستعار لیا گیا تھا۔

ہالینڈ کے دارالحکومت ایمسٹرڈیم کے سنگر لارین میوزیم میں یہ تصویر کچھ عرصے کے لیے رکھی گئی تھی۔ میوزیم کورونا وبا کے تحت بند تھا اور اس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ایک چور اس پینٹنگ کو لے اڑا ہے۔ اس تصویر کو وان گوگ نے ’دی پرسونیج گارڈن ایٹ نیونین ان اسپرنگ‘ کا نام دیا تھا جو ایک انمول شاہکار ہے۔

یہ تصویر 1884 میں بنائی گئی تھی اور اسے چند دنوں کےلیے گروننگر میوزیم سے عاریتاً لاکرسنگرلارین میوزیم میں رکھا گیا تھا۔ اس واقعے کے بعد میوزیم کے سربراہ جان رڈولف ڈی لورم نے کہا کہ وہ اس واقعے کے بعد بہت صدمے میں ہیں اور یہ نہ صرف ان کےلیے بہت بری خبر ہے بلکہ خود گروننگر میوزیم کے لیے بھی بہت تشویشناک خبر ہے۔

انہوں نے کہا کہ فن اور آرٹ پورے معاشرہ کا اثاثہ ہوتا ہے۔ اسے دیکھ کر لوگ خوش ہوتے ہیں اور جذبہ جاگتا ہے اور اس مشکل وقت میں لوگ اس سے متاثر ہوتے ہیں اس وقت میں پینٹنگ کا چوری ہونا ایک بڑا المیہ ہے۔

Leave a Comment