عالمی ادارہ صحت نے کورونا سے مرنے والے مریضوں کے حوالے سے رپورٹ جاری کر دی۔


عالمی ادارہ صحت  کے مطابق کورونا وائرس سے وفات پانے والے کی میت اچھوت نہیں ہے۔ ابھی تک میت کو چھونے والے افراد کو یہ وائرس لگنے کی کوئی اطلاع نہیں ۔ میت کو غسل اور کفن دیا جاسکتا ہے۔ میت کو  عزت کے ساتھ دفنایا جا سکتا ہے۔ کورونا کا مرض ہوا سے پھیلتا ہے۔ کورونا کا مرض متاثرہ مریض کے لعاب اور رشتے داروں سے ملنے سے لگتا ہے۔ کورونا کے مریض کی میت کو جلد سے جلد دفنانا چاہئے۔

عالمی ادارہ صحت کی رپورٹ کے مطابق میت کو تھیلے میں ڈالنے کی ضرورت نہیں۔ میت کو غسل دینے والے کو دستانے اورماسک اور چشما لازمی پہننا چاہئے۔ 

آج تک کورونا کے مریض کی میت سے کوئی بھی متاثر نہیں ہوا ۔ کورونا سے مرنے والے شخص کو جلدی ٹھکانے لگانے کی ضرورت نہیں ۔  خاندان کے لوگ میت کو دیکھ سکتے ہیں پر میت کو ہاتھ لگانے اوربوسہ دینے سے پرہیز کرنا چاہیے۔ خاندان کے جو لگ میت کو قبر میں ڈالیں انکو ماسک اور دستانے لازمی پہننا چاہیے۔

مرنے والے شخص کے سامان کو جلانے یا ختم کرنے کی ضرورت نہیں بلکہ ڈٹرجنٹ سے صاف کرکے جراثیم کش ادویات سے صاف کیا جاسکتا۔


اپنا تبصرہ بھیجیں