چین کے سائنسدانوں کی کورونا وائرس کے خلاف اینٹی باڈیز کی نشاندہی

چین کے سائنسدانوں نے دعویٰ کیا ہے کہ انھوں نے ایسی کئی اینٹی باڈیز کی نشاندہی کر لی ہے جو خلیوں میں کورونا وائرس کے داخل ہونے کی صلاحیت کو ختم کرنے میں انتہائی موثر ہیں۔

چینی سائنسدانوں کا ماننا ہے کہ اس سے کورونا وائرس کی روک تھام اور علاج میں کافی مدد مل سکتی ہے۔

بیجنگ کی سِنگ ہوآ یونیورسٹی کے پروفیسر ژینگ لِنچ کا کہنا ہے کہ ان کی ٹیم نے جس طرح کی اینٹی باڈیز کی نشاندہی کی ہے انھیں ملا کر دوا کا استعمال تمام موجودہ طریقوں سے زیادہ موثر ثابت ہو سکتا ہے، ان طریقوں میں پلازما جیسے بارڈر لائن ٹریٹمنٹ بھی شامل ہیں۔

 ژینگ اور ان کی ٹیم نے جنوری میں کورونا سے صحت یاب ہونے والے مریضوں کے خون سے لی گئی اینٹی باڈیز کا تجزیہ کرنا شروع کیا تھا۔

اس تحقیق کے دوران انہوں نے 206 مونوکلونل اینٹی باڈیز الگ کی ہیں جو ان کے کہنے کے مطابق وائرس کے خلاف مزاحمت کی مضبوط صلاحیت رکھتی ہیں۔

خیال رہے کہ 31 دسمبر 2019 سے چین سے پھیلنے والے خطرناک کورونا وائرس نے اب تک ہزاروں افراد کی جانیں لے لی ہیں اور دنیا بھر میں سائنسدان وائرس کے خاتمے کے لیے ویکسین تیار کرنے کی کوششوں میں جُڑے ہوئے ہیں۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment