کورونا وائرس کی کیا کمزوری ہے؟ سراغ مل گیا

کورونا وائرس سے نجات کے لیے دنیا بھر کے سائنسدان دن رات تجربات کر رہے ہیں اسی اثناء میں امریکی سائنسدانوں کی جانب سے ایک نیاء دعوی سامنے آیا ہے۔

ایک عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اسکریپس ریسرچ میں بتایا گیا کہ ویکسین سے وائرس کے ایک مخصوص حصے کو ہدف بنایا جاسکتا ہے۔

حقیقتا امریکی سائنسداںوں نے نئے کورونا وائرس پر ایک ایسی انسانی اینٹی باڈی کو آزمایا، جو برسوں پہلے سارس کورونا وائرس کو شکست دینے والے ایک مریض سے حاصل کیا گیا تھا اور وہ نئے کورونا وائرس کو بھی کمزور کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

محققین کا کہنا تھا کہ نئے کورونا وائرس کے خلاف اس کمزور حصے کا علم ویکسینز اور تھراپیز کی تیاری میں مدد دینے کے ساتھ ساتھ ان کورونا وائرسز سے محفوظ بھی رکے گا جو مستقبل میں ابھر سکتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ دریافت کیا جانے والا حصہ ممکنہ طور پر اس وائرس کا کمزور ترین پہلو ہے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment