ٹی وی شو ’کون بنے گا کروڑ پتی‘ لٹ گیا۔

برطانیہ کے معروف ٹی وی شو ہووانٹس ٹوبی آملینیئر کی انتظامیہ کے ساتھ کروڑوں پاؤنڈز کا فراڈ ہوگیا۔

غیر ملکی جریدے میں شائع شدہ ایک رپورٹ کے مطابق مشہور ٹی وی شو ہو وانٹس ٹو بی آ ملینیئر کی ٹیم کو ٹھگ لوٹتے رہے۔
تفصیلات کے مطابق شو کی انتظامیہ نے بتایا ہے کہ ایک گینگ شو میں حصہ لینے والے کنٹسٹنٹس کو سوالات کے جوابات بتا کر جیتنے والی رقم میں حصہ بٹورتے رہے۔ انتظامیہ کے مطابق وہی گینگ اب تک 50 لاکھ پاونڈز لوگوں سے لے چکے ہیں۔
رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ شو میں گینگ کے کچھ اہلکار بھرتی کئے گئے تھے
جو تمام تر دستاویزات تک رسائی حاصل کرکے تحقیقاروں کے بنائے گئے سوالات اور جوابات حاصل کرکے گینگ کو فراہم کرتے۔ جو بعد میں وہی گینگ رقم کے عوض جوابات شو کے شرکاء بھیچ دیتے۔
شو میں شرکت سے قبل امیدواروں سے کچھ سوال کیے جاتے ہیں اور یہ مرحلہ جیتنے والا امیدوار ہاٹ سیٹ پر بیٹھتا ہے۔ یہ گینگ اس مرحلے کو پاس کروانے کی بھی فیس 500 پاؤنڈز لیتا تھا۔

اس کے بعد جب امیدوار ہاٹ سیٹ پر بیٹھ جاتا تو وہ فون اے فرینڈ کی لائف لائن میں اسی گینگ کے لوگوں کو فون کرتا اور وہ اسے سوالات کے جوابات بتاتے۔

انتظامیہ کا کہنا ہے کہ سنہ 2002 سے 2007 کے درمیان شو نے اپنے مہمانوں کو 5 کروڑ پاؤنڈز کی رقم انعام میں دی اور اس کا کم از کم 10 فیصد حصہ اس گینگ نے حاصل کیا۔

خیال رہے کہ ہو وانٹس ٹو بی آ ملینیئر برطانوی ٹی وی پر سنہ 1998 میں شروع کیا گیا تھا جس کی بعد ازاں بہت سی نقول دنیا بھر کی زبانوں میں پیش کی گئی۔

بھارت میں بھی کون بنے گا کروڑ پتی کے نام سے اسی فارمیٹ کا شو شروع کیا گیا جس کی میزبانی امیتابھ بچن کرتے ہیں جبکہ ایک بار شاہ رخ خان نے بھی اس کی میزبانی کی۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment