اب پاکستان میں وینٹی لیٹرز بنیں گے


اسلام آباد: کورونا کے مریضوں کیلئے خوشخبری، اب پاکستان میں وینٹی لیٹرز بنیں گے۔ پاکستان میں مقامی طور پر وینٹی لیٹرز کی تیاری کی اجازت دیدی گئی۔

مقامی طور پر وینٹی لیٹرز کی تیاری کی خصوصیات اور ٹیسٹنگ کا طریقہ کار تیار کر لیا گیا۔ پاکستان انجینئرنگ کونسل کی ایکسپرٹ کمیٹی نے منظوری دے دی۔ وینٹی لیٹرز کی تیاری اور  ٹیسٹنگ کیلئے تیز ترین طریقہ کار اپنایا گیا۔ فواد چوہدری کی درخواست پر وزیراعظم نے تیز ترین طریقہ کار کی ہدایت کی۔ کورونا میں بڑھتی ہوئی ڈیمانڈ کے باعث قانونی پیچیدگیوں کو ختم کیا گیا۔ پاکستان انجینئرنگ کونسل کو وینٹی لیٹرز کے 48 ڈیزائن موصول ہوئے۔ وینٹی لیٹرز کے تین ڈیزائن کو منظوری کیلئے ڈریپ کو بھیجا گیا۔ کلینیکل ٹیسٹ کے دوران وینٹی لیٹرز کی خصوصیات چیک کی گئیں۔ پہلے مرحلے میں پریشر اور والیوم کنٹرول میکینکل وینٹی لیٹرز کی تیاری کی اجازت دی گئی ہے۔ وینٹی لیٹر کو مسلسل 96 گھنٹے انسانی جسم پر چیک کیا جائے گا۔ ایکسپرٹ کمیٹی ہر چھ ماہ بعد خصوصیات اور ٹیسٹنگ طریقہ کار کا جائزہ لے گی۔


Comments are closed.