بھارت کے ناظم الامور گورو اہلووالیا کی دفتر خارجہ طلبی

 بھارت کی طرف سے لائن آف کنٹرول اور ورکنگ باونڈری پر جنگ بندی کی خلاف ورزیوں پر پاکستان نے بھارتی ناظم الامور کو دفتر خارجہ طلب کرکے شدید احتجاج ریکارڈ کرایا۔

ترجمان دفتر خارجہ عائشہ فاروقی کے مطابق ڈی جی برائے جنوبی ایشیا زاہد حفیظ چوھدری نے بھارتی ناظم الامور گورو اہلووالیا کو دفتر خارجہ طلب کیا، ایل او سی پر سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی پر پاکستان کی طرف سے شدید احتجاج ریکارڈ کراتے ہوئے احتجاجی مراسلہ ان کے حوالے کیا۔

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ بھارتی فائرنگ سے  ڈھنڈیال سیکٹر میں دو سالہ بچہ محمد حسیب شہید ہوگیا جبکہ رکھ چکڑی سیکٹر میں 26سالہ وقار شاہ اور 72سالہ محمد شریف، چڑی کوٹ سیکٹر میں 17سالہ ٹیپو اور بروھا سیکٹر میں 25سالہ زرینہ شدید ذخمی ہوئے۔

بھارتی افواج لائن آف کنٹرول پر تسلسل سے شہری آبادی کو بھاری اسلحہ سے نشانہ بنا رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ سال رواں میں اب تک بھارت کی طرف سے 794مرتبہ جنگ بندی کی خلاف ورزی کی جا چکی ہے۔ جان بوجھ کر شہری آبادی کو نشانہ بنانا انسانی عظمت، بین الاقوامی انسانی حقوق اور ہیومنٹیرین قوانین کی خلاف ورزی ہے۔ بھارت کی طرف سے جنگ بندی کی خلاف ورزی علاقائی امن و سلامتی کے لئے خطرہ ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے واضح کیا کہ بھارتی خلاف ورزیوں سے تزویراتی غلط فہمی پیدا ہوسکتی ہے۔ پاکستان نے بھارت پر زور دیا ہے کہ 2003کی جنگ بندی مفاہمت کا احترام کرے۔ بھارت اپنی افواج کو جنگ بندی پر مکمل عملدرآمد کی ہدایت کرے۔

لائن آف کنٹرول اورورکنگ باونڈری پر بھارت امن برقرار رکھے اور اقوام متحدہ کے امن مشن کو سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق کردارادا کرنے دے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں