کورونا کے بعد ممکنہ سیلاب کے امتحان کا سامنا


اسلام آباد: کورونا کے باعث سیلابی اسکیموں کو مکمل کرنے میں سستی نہ کی جاے فلڈ کمیشن نے خبردار کر دیا۔

رپورٹ کے مطابق فلڈ کمیشن نےمون سون کی بارشوں سے پہلے سیلابی صورتحال سے نمٹنے کیلئے ایڈوائزری جاری کردی۔

فلڈ کمیشن کے مطابق  سیلاب سے بچاؤ کے لیے جاری تمام منصوبے جلد از جلد مکمل کیے جایئں۔ 2019 کے سیلاب سے متاثرہ بند و دیگر مقامات کی تعمیر نو کو جلد مکمل کیا جائے۔

سیلاب سے بچنے کے لیے ڈیموں، بیراج و دیگر پانی کے بڑے نالوں پر جاری منصوبے مکمل کیے جائیں۔ سیلاب سے بچاؤ کیلئے پری مون سون انسپکشن کو بھی یقینی بنایا جائے اور ایسی تجاوزات کو ختم کیا جائے جو سیلاب کی وجہ بن سکتی ہیں۔

سیلاب سے بچنے کے لیے تمام متعلقہ وفاقی و صوبائی ادارے اپنے اپنے منصوبوں کو 30 جون 2020 تک مکمل کریں۔علاوہ ازیں صوبائی حکومتیں اپنے متعلقہ منصوبوں کے فنڈز کا اجراء بروقت کریں۔

فلڈ کمیشن کی جانب سے ڈی سی راولپنڈی کو نالہ لئی میں سیلاب سے بچنے کیلئے بروقت اقدامات کی ہدایت کی گئی ہے۔ اور کہا گیا ہے کہ واپڈ سیلابی صورتحال کو ناپنے کیلئے اپگریڈیشن کے منصوبوں کو 30 جون تک مکمل کیا جائے۔


Leave A Reply

Your email address will not be published.