وزیراعظم کے معاونین خصوصی کو عہدوں سے ہٹانے کیلئے سپریم کورٹ میں درخواست دائر

Supreme Court of Pakistan

اسلام آباد: وزیر اعظم کے 5مشیروں اور 14 غیر منتخب معاونین خصوصی کی تقرریاں غیر آئینی قرار دینے کے حوالے سے سپریم کوٹ میں درخواست دائر کر دی گئی۔

درخواست ایڈووکیٹ جہانگیر جدون کے ذریعے دائر کی گئی۔درخواست میں وزیر اعظم کے مشیر  ملک امین اسلم خان ،عبدالرزاق داؤد اور ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کو فریق بنایا گیا ۔

دائر درخواست میں ڈاکٹر عشرت حسین اور ڈاکٹر ظہیرالدین بابر اعوان  کو بھی فریق بنایا گیا ہے۔ ڈاکٹر ثانیہ نشتر،مرزا شہزاد اکبر ، محمد شہزاد ارباب بھی فریق بنایا گیا ہے۔ سید ذوالفقارعباس بخاری،شہزاد سید قاسم ،علی نواز اعوان کو بھی فریق بنایا گیا ۔عثمان ڈار،ندیم افضل گوندل، سردار یار محمد رندھ ،ڈاکٹر ظفر مرزا ،ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان اور ندیم بابر کو بھی فریق بنایا گیا ہے۔ معید یوسف اور ڈاکٹر تانیہ  کو بھی فریق بنایا گیا ہے۔

 درخواست میں یہ بھی استدعا کی گئی ہے کہ مشیروں اور معاونین کو وفاقی وزیر کے برابر اختیار دینا خلاف آئین قرار دیا جائے۔آئینی درخواست میں وزیراعظم کے اختیار پر بھی سوال اٹھا دیا گیا۔

وزیراعظم کو یہ اختیار حاصل نہیں کہ وہ غیر منتخب افراد کو وفاقی وزراء کے درجے پر تعینات کریں۔درخواست میں مزید کہا گیا کہ مشیروں اور معاونین خصوصی کو وفاقی وزراء کے برابر تنخواہیں حاصل کرنے کا اختیار نہیں۔مشیروں اور معاونین خصوصی کو ادا کی گئی گئیں تنخواہیں اور مراعات واپس کرنے کا حکم دیا جائے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment