فیصل ایدھی نے سندھ حکومت کا بھانڈا پھوڑ دیا


سماء نیوز کے مارننگ شو میں فیصل ایدھی نے کہا کہ گزشتہ سال کی نسبت اس سال کراچی میں اموات کی شرح پچاس سے ستر فیصد رہی۔

ان کا کہنا تھا کہ کہ اپریل کی بات کی جائے تو ستر فیصد میتیں ایدھی سنٹر لائی گئیں جن میں زیادہ تر بڑی عمر کے افراد شامل تھے۔ لیکن یہ کہنا مشکل ہی ہوگا کہ سب کی موت کورونا کے باعث ہوئی ہے۔
مزید کہا کہ تمام صوبوں میں لوگوں کے ٹیسٹ بہت کم ہورہے ہیں اس وجہ سے یہ نہیں کہا جا سکتا کہ کس کو کورونا ہے اور کس کو نہیں ہے۔

فیصل ایدھی نے کہا کہ سب سے بڑی وجہ اسپتالوں میں او پی ڈیز بند ہونے اور علاج میسر نہ ہونا بھی ہے۔

ڈیتھ سرٹیفیکیٹس کا ذکر کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پہلے لوگوں سے ڈیتھ سرٹیفیکیٹس طلب نہیں کیئے جاتے تھے لیکن اب یہ معاملہ  بھی شروع کردیا ہے۔ اور میتوں کے ورثاء کے مطابق ان کی اموات سانس کی دشواری کے باعث ہوئی ہیں لیکن ڈاکٹرز کے مطابق اور بھی بہت سی بیماریاں ایسی ہیں جن میں سانس لینے میں دشواری آتی ہے۔ تاہم یہ کہنا کہ سب کورونا سے مرے ہیں یہ غلط ہوگا۔

لوگوں کے مرنے کی بڑی وجہ او پی ڈیز بند ہونا ہے۔ اپنا خیال رکھیں اگر کوئی علامت ظاہر ہو تو اسپتال جائیں ڈرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔  لاک ڈاون کا احترام کریں اور اپنے ماں باپ اور اہل خانہ کی خاطر گھروں تک محدود رہیں۔


Leave A Reply

Your email address will not be published.