آئی ایم ایف کی جانب سے بڑی خوشخبری:1ارب 38 کروڑ ڈالرز پیکج کی منظوری

آئی ایم ایف نے پاکستان کے لیے ایک ارب 38 کروڑ ڈالرز کے ریلیف پیکیج کی منظوری دے دی۔

رپورٹ کے مطابق آئی ایم ایف ایگزیکٹو بورڈ کا کہنا ہے کہ پاکستان کو کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے ڈونر ممالک سے ہنگامی فنڈنگ کی ضرورت ہے۔ کورونا وائرس سے پاکستانی معیشت متاثر ہورہی یے۔ ریلیف پیکیج مالیاتی ضرورت کو پورا کرنے اور صحت عامہ کے اخراجات پورا کرنے میں مددگار ثابت ہوگا۔
ان کا کہنا ہے پاکستان کو کورونا سے نمٹنے کے لیے بیرونی فنانسنگ کی ضرورت ہے آئی ایم ایف کی سپورٹ زرمبادلہ کے ذخائر کو بہتر کرے گی ریلیف پیکیج سے بجٹ کی ضروریات کو پورا کیا جا سکے گا۔

آئی ایم ایف کا مزید کہنا ہے کہ کورونا وائرس کم ہونے کے بعد قرض پروگرام پر بات چیت بحال ہوگی پاکستان نے قرض پروگرام کے تحت باقی ماندہ پالیسیوں پر عمل درآمد کی یقین دہانی کرائی ہے پاکستان معاشی اصلاحات کا عمل جاری رکھے گا۔ پاکستان توانائی کے شعبے میں اصلاحات سمیت فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کی سفارشات پر عمل درآمد یقینی بنائے گا۔

واضح رہے پاکستان نے کورونا وائرس کو قابو کرنے کے لیے لاک ڈاون کیا ہے۔ وزیر اعظم ریلیف پیکیج کے تحت غریب افراد کی مالی مدد کی جا رہی ہے۔ اس کے علاوہ صنعتوں کے لیے ریلیف پیکیج کا اعلان کیا گیا ہے اور مرکزی بینک نے شرح سود میں نمایاں کمی کی ہے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment