سپریم کورٹ: پی ایم ڈی سی کے لیے 11 رکنی ایڈہاک کونسل قائم

سپریم کورٹ نے پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل کا تفصیلی فیصلہ سنا دیا۔

رپورٹ کے مطابق سپریم کورٹ نے پی ایم ڈی سی کو چلانے کے لیے گیارہ رکنی ایڈ ہاک کونسل قائم کر دی۔ ایڈہاک کونسل کی سربراہی جسٹس ریٹائرڈ اعجاز افضل خان کریں گے۔

ایڈ ہاک کونسل کے ممبران میں اٹارنی جنرل، سرجن جنرل آفس پاکستان، وائس چانسلر نیشنل یونیورسٹی آف میڈیکل سائنسز شامل ہیں۔ وائس چانسلر یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز، وائس چانسلر سندھ جناح میڈیکل یونیورسٹی، وائس چانسلر خیبر میڈیکل یونیورسٹی بھی ایڈ ہاک کونسل کے ممبر ہوں گے۔

وائس چانسلر شہید ذوالفقار علی بھٹو میڈیکل یونیورسٹی، وائس چانسلر بولان میڈیکل یونیورسٹی کوئٹہ، پرنسپل مونٹ مورینسی کالج آف ڈینٹسٹری لاہور بھی کونسل کا حصہ ہوں گے۔

تفصیلی فیصلے کے مطابق سپریم کورٹ نے رجسٹرار پی ایم ڈی سی کی عہدے پر بحالی کا حکم کالعدم قرار دے دیا۔

عدالت کا کہنا تھا کہ رجسٹرار کی تعیناتی پی ایم ڈی سی کا اختیار ہے اس لیے رجسٹرار اپنی بحالی کیلئے پی ایم ڈی سی سے رجوع کریں۔

فیصلے میں کہا گیا کہ رجسٹرار پی ایم ڈی سی توہین عدالت کی درخواست واپس لینے کی یقین دہانی کرائیں، یقین دہانی پر توہین عدالت کی ہائی کورٹ میں زیرالتواء درخواست خارج کی جاتی ہے۔

علاوہ ازیں سپریم کورٹ نے پی ایم ڈی سی کونسل کو جلد اجلاس بلانے کا فیصلہ سنایا۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment