کورونا وائرس: روس میں پیسوں کی ذخیرہ اندوزی جاری

عالمی وباء کورونا وائرس کے لاک ڈاون کا دورانیہ بڑھتے ہی روس میں لوگوں نے نقد رقم کو ذخیرہ کرنا شروع کردیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق مارچ کے اوائل سے اب تک روس میں لوگوں نے اے ٹی ایم اور بینکوں کی شاخوں سے 13.6 ارب ڈالرز (لگ بھگ 22 کھرب پاکستانی روپے) نکلوا لیے ہیں۔

صرف 7 ہفتے کے اندر اتنی رقم بینکوں سے نکلوائی گئی جو کہ 2019 میں اس طرح کی مجموعی ٹرانزیکشنز سے بھی زیادہ ہے۔

رپورٹ کے مطابق بینکوں سے پیسے نکالنے کی شرح میں اس وقت تیزی سے اضافہ ہوا جب روسی صدر ولادی میر پیوٹن کی جانب سے کورونا وائرس کی روک تھام کے لیے اقدامات کی تفصیلات جاری کی گئی تھیں۔

ماہرین کے مطابق اس کے بعد روسی عوام نے اسی خوف کے تحت پیسوں کو ذخیرہ کرنا شروع کردیا، جس کے باعث دیگر ممالک میں لوگ خوراک اور عام استعمال کی اشیا کو ذخیرہ کررہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا ‘لوگوں کو خوف ہے کہ قرنطینہ کے دوران بینک سروسز دستیاب نہیں ہوں گی، اسی ڈر کی وجہ سے وہ تیزی سے پیسے نکلوا رہے ہیں’۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment