لاک ڈاون: نیٹ فلکس کے صارفین میں حیرت انگیز اضافہ

کورونا لاک ڈاون کے باعث رواں سال گھریلو تفریحی کمپنی ‘نیٹ فلکس’ کے صارفین میں حیرت انگیز اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

ایک رپورٹ کے مطابق رواں سال کے ابتدائی تین ماہ میں 16 ملین لوگوں نے نیٹ فلکس پر اکاونٹس بنائے ہیں جو کہ گزشتہ سال 2019 کی تعداد سے دگنی تعداد ہے۔ اس سال کمپنی کے شیئر کی قیمت 30 فیصد سے زیادہ بڑھ چکی ہے کیونکہ سرمایہ کار گھروں میں زیادہ وقت گزارنے والے لوگوں سے فائدہ اٹھانے کی اہلیت پر شرط لگاتے ہیں۔

اسٹریمنگ کا مطالبہ اتنا زیادہ ہو گیا ہے کہ گزشتہ ماہ نیٹ فلکس نے کہا تھا کہ وہ یورپ میں اپنے ویڈیوز کے معیار کو کم کرے گا تاکہ انٹرنیٹ سروس فراہم کرنے والے اداروں پر دباؤ کم کیا جاسکے۔ فرم نے بڑھتی دلچسپی کو سنبھالنے کے لئے اضافی 2000 کسٹمر سپورٹ عملے کی خدمات حاصل کیں۔ نیٹ فلکس نے دعوی کیا ہے کہ تقریبا 85 ملین افراد نے اس کی اصل فلم اسپنسر کونفیڈنشیئل کو کم سے کم دو منٹ کے لئے دیکھا تھا۔ دریں اثنا دستاویزی سیریز ٹائیگر کنگ 64 ملین گھرانوں تک پہنچ گئی۔
خیال رہے تجزیہ کاروں کی توقعات کے مطابق  فرم کو تین ماہ میں مزید 7.5 ملین ارکان کو جون کے آخر میں شامل کرنے کی توقع ہے۔ لیکن اس نے سرمایہ کاروں کو متنبہ کیا ہے کہ دنیا بھر میں لاک ڈاؤن  ختم ہونے کے ساتھ  ہی ناظرین اور نمو میں کمی آئے گی۔ اس فرم کے پاس اب دنیا بھر میں 182 ملین سے زیادہ صارفین ہیں۔ فرم کی آمدنی 5.76 بلین ڈالر تک بڑھ گئی ہے جو کہ 2019 کی اسی مدت کے مقابلے میں 27 فیصد سے زیادہ ہے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment