اسلام آباد میں یہودی پیروکار گرفتار کرلیا گیا

اسلام آباد: فیصل آباد کے ایک مذہبی گھرانے سے تعلق رکھنے والے ڈیوڈ آریل (پرانا نام خلیل الرحمٰن) کو سیکیورٹی اداروں نے حراست میں لے لیا ہے۔

 رپورٹ کے مطابق فیصل آباد کے رہائشی ڈیوڈ آریل ایک عالم تھے مگر 2013 میں انہوں نے ‘پاکستان اسرائیل الائنس’ نامی تنظیم میں شمولیت اختیار کی وہ پچھلے 7 برس سے پاکستان کے اسرائیل کے ساتھ تعلقات استوار کرنے کی مہم چلا رہے ہیں۔گزشتہ ایک ماہ سے ان کا مطالبہ ہے کہ ان کے پاکستانی پاسپورٹ سے اسرائیل سے متعلق تحریر مٹا دی جائے تاکہ وہ پاکستانی پاسپورٹ پر اسرائیل جا سکیں۔ اس مقصد کے حصول کے لیے ڈیوڈ نے اسلام آباد کے نیشنل کلب کے سامنے احتجاجی کیمپ لگا رکھا تھا خیمے پر اسرائیل کا پرچم بھی چسپاں تھا۔

سوشل میڈیا پر ڈیوڈ آریل کے بیانات اور مطالبات پر عوامی ردعمل سامنے آنے کے بعد سینیٹ کے داخلہ امور کمیٹی کے چیئرمین رحمٰن ملک کے اس معاملے کا نوٹس لینے پر پولیس نے معاملے کی تحقیقات کے بعد انہیں اپنی تحویل میں لے لیا ہے۔

اس سے قبل انہوں نے اپنا نام تبدیل کرنے کی بھی درخواست دی تھی اور قومی شناختی کارڈ پر اپنا نام خلیل الرحمٰن سے ڈیوڈ آریل تحریر کرایا تھا۔

رحمٰن ملک نے ٹوئٹر پر ایک صارف کی جانب سے اسلام آباد میں اسرائیل کا پرچم لگانے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہ کیسے ہو گیا؟ ڈیوڈ آریل نے تین ماہ قبل وزارتِ خارجہ سے درخواست کی تھی کہ ان کے پاسپورٹ سے اسرائیل کے حوالے سے تحریر حذف کی جائے تاکہ وہ پاکستانی پاسپورٹ پر اسرائیل کا سفر کر سکیں۔ ان کی درخواست وزارت خارجہ کی جانب سے ضبط کیے جانے پر انہوں نے پریس کلب کے سامنے احتجاج کیا۔

واضح رہے کہ پاکستان اسرائیل کو تسلیم نہیں کرتا۔ لہذٰا سفارتی تعلقات نہ ہونے کے باعث اس کے پاسپورٹ پر درج ہے کہ یہ پاسپورٹ اسرائیل کے سفر کے لیے کارآمد نہیں ہے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment