ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان سے وزارت اطلاعات و نشریات کا قلم دان واپس کیوں لیا گیا؟


 ڈاکٹر‏فردوس عاشق اعوان کو عہدے سے ہٹائے جانے کی وجوہات منظر عام پر آنے لگیں۔

رپورٹ کے مطابق فردوس عاشق اعوان پر حکومتی اشتہاری بجٹ سے 10 فیصد کمیشن لینے اور مالی ہیر پھیر کے الزامات لگائے گئے ہیں ۔فردوس عاشق اعوان نے3 سرکاری گاڑیاں گھریلو استعمال کیلئے لے رکھی تھیں جسکی بطور معاون خصوصی انہیں اجازت نہیں تھی۔زرائع کا کہنا ہے کہ فردوس عاشق اعوان نے سرکاری خرچ پر غیر قانونی طور پر 11 ملازم اپنے گھریلو استعمال کیلئے رکھے ہوئے تھے۔ مالی اور خاکروب بھی پاکستان ٹیلی ویژن کے بجٹ سے اپنے ذاتی استعمال میں رکھے ہوئے تھے۔ذرائع نے دعوی کیا ہے کہ فردوس عاشق اعوان نے اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے غیر قانونی بھرتیاں بھی کیں۔


Leave A Reply

Your email address will not be published.