نیو یارک میں سستے وینٹی لیٹرز کی پیداوار شروع

واشنگٹن: کورونا وائرس کے پھیلاؤ سے قبل عموما وینٹی لیٹرز کی تیاری کے لیے زیادہ لاگت کے ساتھ ایک برس کا عرصہ درکار ہوتا تھا مگر اس وبا کے پھیلنے کے بعد دنیا بھر کے انجنیئرز اور سائندانوں نے ایسی ٹیکنالوجی اپنائی ہے کہ اب یہ ایک ماہ سے کم مدت اور کم لاگت میں زیادہ تعداد میں تیار ہو جاتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق ریاست نیو یارک کے شہر لانگ آئی لینڈ میں ایسی ہی فیکڑی پائی جاتی ہے جہاں سستے وینٹی لیٹرز تیار ہوتے ہیں۔
اس فیکٹری کا دعوی ہے کہ ایک ماہ کے اندر ان وینٹی لیٹرز کا نہ صرف ڈیزائن تیار کیا گیا بلکہ ان کی پیداوار بھی شروع کر دی ہے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment