کورونا وائرس: تہران میں 700 افراد زہر پی کر موت کی آغوش میں چلے گئے

تہران: زہریلا میتھانول کورونا وائرس کا علاج کرتا ہے اس غلط عقیدے نے ایران میں 700 سے زیادہ افراد کو ہلاک کر دیا۔ جو اب تک ایرانی وزارت صحت کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مقابلے میں زیادہ اموات کی نمائندگی کرتا ہے۔

وزارت کے مشیر حسین حسنیان نے کہا کہ اسپتالوں کے باہر تقریبا 200 افراد ہلاک ہوگئے۔اس کے علاوہ ایرانی وزارت صحت کے ترجمان کیانوش جہاں پور نے کہا کہ 20 فروری سے 525 افراد زہریلی میتھانول الکحل کو نگلنے سے ہلاک ہوئے۔ جسے سرکاری ٹی وی نے پیر کو رپورٹ کیا۔

 یاد رہے اپریل میں اس سے قبل جاری ہونے والی ایک سرکاری رپورٹ کے مطابق  وبائی مرض کورونا وائرس کے دوران گزشتہ ایک سال کے دوران ایران میں الکحل کی زہر آلودگی نے دس گنا زیادہ اضافہ کیا ہے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment