کسانوں کیلئے خوشخبری: حکومت کی جانب سے53 ارب روپے کی سبسڈی دیئے جانے کا امکان

اسلام آباد: رواں سال زرعی پیداوار میں اضافے اور کسانوں کی مالی حالت بہتر کرنے کے لیے وفاقی حکومت خریف سیزن میں کھاد پر 53 ارب روپے کی سبسڈی دینے کا ارادہ رکھتی ہے۔

اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے ڈی اے پی کھاد پر 925 روپے فی بوری جبکہ یوریا کھاد پر 234 روپے فی بوری سبسڈی دیے جانے کا امکان ہے۔ اس کے علاوہ کاشتکاروں کے لئے شرح سود میں کمی کا بھی امکان ہے۔ جس میں شرح سود کو 10 فیصد تک لائے جانے کا امکان ہے جو اس وقت 18 فیصد ہے جس سے ملک بھر کے کسانوں کو لگ بھگ 9 ارب روپے کا فائدہ ہوگا۔

حکومت اس دفعہ کسانوں کو کپاس کے بیج کم قیمت پر فروخت کرنے پر بھی غور کر رہی ہے اس مقصد کے لئے 2 ارب 30 کروڑ روپے کی سبسڈی دیے جانے کا امکان ہے۔

دوسری جانب کورونا کی وجہ سے شادی ہالز ہونے کے باعث پولٹری کا کاروبار کرنے والوں کا بڑا نقصان ہوا ہے۔ اس لیے حکومت پولٹری فارمرز کے قرضوں کو ایک سال کے لئے موخرکرنے کا اردہ رکھتی ہے اور اس شعبے کو 4 ارب 70 کروڑ روپے کی سبسڈی دیے جانے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment