گندم اور آٹا اسکینڈل: نیب نے تحقیقات مکمل کر کے 10 ارب روپے وصول کر لیے


کراچی: صوبہ سندھ میں 15 ارب روپے سے زائد کے گندم اسکینڈل پر نیب نے تحقیقات کے بعد اس کی رپورٹ جاری کردی ہے۔

نیب کے مطابق سندھ کے 9 اضلاع میں گندم بحران اسکینڈل کی الگ الگ انکوائریاں کی گئیں۔ نیب کے سندھ میں مختلف گوداموں پر چھاپوں کے دوران 5 ارب روپے سے زائد کی گندم غائب پائی گئی تھی۔ نیب کی انکوائری سےپتہ چلا کہ اندرون سندھ سے کراچی کے سرکاری گوداموں میں بھیجی گئی گندم کراچی میں پہنچی ہی نہیں تھی۔ نیب کی تحقیقات کے ساتھ ساتھ برآمدگیاں بھی کی گئیں۔ نیب نے 15 ارب روپے سے زائد کے اسکینڈل میں سے 10 ارب روپے کی ریکوری کرلی ہے۔

نیب کے مطابق صوبے سندھ کے مختلف مل مالکان 2 ارب روپے سے زائد کی پلی بارگین بھی کرچکے ہیں۔ 180 دن کے کریڈٹ کی بنیاد پرگندم اسٹاک سے 9 ارب روپے کی ادائیگیاں رُکی ہوئی تھیں۔ نیب کی ایما پر مل مالکان نے 8 ارب روپے سے زیادہ ادا کردیے ہیں۔

اس سلسلے میں گندم اسکینڈل میں ملوث صوبائی محکمہ خوراک کےافسران سمیت دیگر ملزمان کیخلاف بھی 4 ریفرنس دائر کردیئے گئےہیں۔ نیب نے ذمہ داروں کیخلاف مزید اس حوالے سے ریفرنسز دائر کرنے کا عندیہ بھی دے رکھا ہے۔


Leave A Reply

Your email address will not be published.