سوشل ڈسٹنسنگ: اب ایک ہی شخص کھانا کھائے گا

سوئیڈن: عالمگیر وباء کورونا وائرس کی رک تھام کے لیے دنیا بھر میں لاک ڈاؤن ہے۔ جس کی وجہ سے دنیا بھر کے دفاتر، تعلیمی ادارے، بازار حتی کہ ہر ایک سماجی سرگرمی جمود کا شکار ہے۔ دنیا کے متعدد ممالک میں سوشل ڈسٹنسنگ پر عمل پیرا ہوتے ہوئے خفاظتی اقدامات کو بروئے کار لا کر ریسٹورینٹس کھول دیے گئے ہیں لیکن اس سے بڑھ کر یہ کہ سوئیڈن میں اسی سماجی دوری کے اصول کو سامنے رکھتے ہوئے جلد ایک ایسا ریسٹورینٹ کھولا جا رہا ہے جس میں ایک دن میں ایک اکیلا شخص ہی کھانا کھا سکے گا۔ حتی کہ کھانا بھی ٹیبل پر رسی کی مدد سے ٹوکری کے ذریعے رکھا جائے گا۔  ‘ ٹیبل فار ون’ نامی یہ ریسٹورینٹ 10 مئی کو کھلے گا اور یکم اگست تک سروسز فراہم کرے گا۔

ہوٹل کے سربراہ کا کہنا ہے کہ روزانہ ایک شخص ہی ایک ٹیبل پر بیٹھ کر کھانا کھا سکے گا اور اس کے استعمال شدہ برتن دو مرتبہ دھلیں گے جب کہ ٹیبل کو بھی سینیٹائز کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment