وزیراعظم کا ملک میں جاری لاک ڈاؤن کو مرحلہ وار کھولنے کا اعلان


اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ حکومت کورونا کی وجہ سے لگے لاک ڈاون  کو آہستہ آہستہ کھول رہی ہے۔ اب لاک ڈاؤن اس لیے کھول رہے ہیں کہ عوام مشکل سے نکل آئیں۔ ایس او پیز پرعمل نہ کیا گیا توکورونا تیزی سے پھیلے گا اورپھرہم کو ایک بار پھر بھی لاک ڈاؤن کی طرف جانا پڑے گا۔

ٹائیگر فورس سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سےملک میں بڑےمسائل ہیں۔ دیہاڑی داراورچھوٹا طبقہ لاک ڈاؤن سےبہت متاثرہوا۔ ہمارے سامنے ایک بہت بڑا چیلنج ہے۔ عمران خان نے کہا کہ یہ اب وقت کی ضرورت تھی اور میں اس میں شامل تمام نوجوانوں کاشکریہ اداکرتا ہوں۔ موجودہ صورت حال میں ٹائیگر فورس کا اب اہم کردار ہوگا کیوں کہ حکومت یا انتظامیہ اکیلے کچھ بھی نہیں کرسکتی۔ ہمیں ایسے مواقعوں کے لیے رضاکاروں کی ضرورت ہوتی ہے۔

وزیراعظم نے ٹائیگر فورس کو ہدایت کی کہ ذخیرہ اندوزوں کے خلاف انتظامیہ کو شکایات درج کرائیں گے۔ رضاکار پیسے اکٹھےنہیں کریں گے۔ٹائیگرفورس کوتنخواہ بھی نہیں ملے گی اور یہ مقامی انتظامیہ کے ساتھ مل کرکام کرے گی۔ انہوں نےکہا کہ انتظامیہ اکیلی کچھ نہیں کر سکتی ملک میں اس وقت کورونا کے خلاف جہاد جاری ہے اور اس میں رضاکاروں کی ضرورت ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ ٹائیگرفورس جہاد کرے گی اور ان کو کسی قسم کی مالی امداد نہیں ملے گی۔ ٹائیگرفورس کی مدد سے بےروزگار لوگوں کو رجسٹر کرنے میں بھی مدد کرے گی۔ ٹائیگر فورس کی تشکیل اس لیے دی تھی کہ وہ مشکلات میں گھیرے عوام الناس کی مدد کا فریضہ سر انجام دے گی۔


Leave A Reply

Your email address will not be published.