اقوام متحدہ: بھارت سے انسداد دہشتگردی قوانین پر نظر ثانی کا مطالبہ

نیویارک: اقوام متحدہ انسانی حقوق کے عہدیداروں نے بھارتی انسداد دہشتگردی قوانین کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے بھارت سے قوانین پر نظر ثانی کا مطالبہ کر دیا۔

اقوام متحدہ کے عہدیداران نے کہا کہ بھارتی قوانین عالمی انسانی حقوق کے اصولوں پر پورا نہیں اترتے۔ اس موقع پراقوام متحدہ میں پاکستان کے مستقل مندوب منیر اکرم نے کہا کہ بھارتی انسداد دہشتگردی قوانین پراعتراضات پاکستانی اور کشمیری موقف کی تائید ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر میں حق خودارادیت کی جائز جدوجہد کو دہشتگردی قرار نہیں دیا جا سکتا جبکہ بھارتی سرکار ان قوانین کا سہارا لے کر اختلاف رائے کو دبانے کی کوشش کر رہی ہے۔

یاد رہےاس سے قبل اقوام متحدہ میں پاکستان کے مستقل مندوب منیراکرم نے کہا تھا کہ اقوام متحدہ کو اسلام  دشمن کارروائیوں اور مظالم کا نوٹس لینا چاہیے۔اُن کا کہنا تھا کہ بھارت کشمیرمیں سنگین ریاستی دہشتگردی کا مرتکب ہے۔ اقوام متحدہ کو اسلام  دشمن کارروائیوں اور مظالم کا نوٹس لینا چاہیے۔انہوں نے کہا انتہا پسند ہندوسوچ مسلمانوں کی شناخت ختم کرنے کے درپے ہے اور بھارت کشمیر میں مسلمانوں کی نسل کشی کر کے اپنا تسلط قائم رکھنا چاہتا ہے۔اسکے علاوہ ترجمان دفتر خارجہ نے بھی بھارت کی بڑھتی دہشتگردی پرعالمی برادری سے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا تھا۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment