کورونا ویکسین سب سے پہلے امریکہ کو کیوں فراہم کی جائے؟فرانسیسی حکومت برہم


پیرس: فرانسیسی دوا ساز کمپنی سنوفی کے سربراہ نے کورونا ویکسین پر سب سے پہلا حق امریکہ کا قراردیا جس پر فرانسیسی حکومت نے برہمی کا اظہار کیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق فرانسیسی دوا ساز کمپنی سنوفی کے سربراہ پال ہڈسن نے کہا تھا کہ کورونا وائرس کی کامیاب ویکسین کی تیاری کی صورت میں ابتدائی آرڈرزامریکہ کو فراہم کیے جائیں گے کیونکہ سب سے پہلے اس نے کمپنی کو ویکسین کی تیاری کے لیے فنڈنگ کی۔

فرانس کے وزیراعظم کے مطابق کسی بھی کامیاب ویکسین کو برابری کی بنیاد پر ہی تقسیم کیا جائے گا اور اس حوالے سے بحث کی گنجائش موجود نہیں ہے۔ فرانسیسی صدر ایمانویل میکرون نے اس بارے میں کہا کہ ویکسین کو عالمی حیثیت حاصل ہونی چاہیے، دوا کو مارکیٹ کی قوتوں کے تابع نہیں ہونا چاہیے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سب کو ویکسین تک رسائی نہ ملنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، ساتھ ہی کہا کہ وہ دوا ساز کمپنیوں کے عہدیداران سے ملاقات بھی کریں گے۔

یاد رہے کہ کورونا وائرس سے پوری دنیا میں ہلاکتوں کی تعداد 3 لاکھ 8 ہزار سے تجاوز کرگئی۔ عالمی سطح پر کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 46 لاکھ 28 ہزار سے زائد ہو گئی ہے۔


Leave A Reply

Your email address will not be published.