شوگر رپورٹ سے متعلق نئی باتیں لے کر آیا ہوں،شہزاد اکبر

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے احتساب و امور داخلہ شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ میں شوگر رپورٹ سے متعلق نئی باتیں لے کر آیا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ شاہد خاقان عباسی نے خود کو لائق اعظم تصور کر رکھا ہے جیسے کہ وہ ای سی سی کی سربراہی کرتے رہے ہیں اور قوم کو 20 ارب روپے کی سبسڈی بھی انہوں نے ہی دی۔ انہوں نے کہا کہ چینی کی قیمتوں میں اتار چڑھاؤ سے منافع سرمایہ کار کماتا ہے جبکہ قیمتوں میں ردو بدل کا نقصان عام آدمی اٹھاتا ہے۔ انکا کہنا تھا کہ ہمارے دور میں گزشتہ پانچ سالوں میں 29 ارب روپے کی سبسڈی دی گئی جبکہ پنجاب میں 2.4 ارب روپے کی سبسڈی دی گئی۔  وزیراعظم عمران خان نے چینی کی قیمتوں میں اتارچڑھاؤ پر کمیشن بنایا۔

شہزاد اکبر کا کہنا تھا کہ سابقہ حکومت نے مارچ 2017 میں 4 لاکھ ٹن برآمد کی اجازت دی، یہ کرمنل ایکٹ ہے۔ انہوں نے کہا کہ چینی کمیشن کی جو رپورٹ آئی وہ کابینہ میں پیش ہوئی، کابینہ نے فیصلہ کیا کہ اس رپورٹ کو پبلک کیا جائے، کمیشن کی رپورٹ جیسے موصول ہوئی پبلک کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے کچھ دوستوں نے شاید رپورٹ صحیح سے نہیں پڑھی، رپورٹ انگریزی میں ہے اور شاید بڑی ہے اس لیے اپوزیشن کو سمجھ نہیں آئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں