توشہ خانہ ریفرنس کیس میں سابق وزرائے اعظم اور سابق صدر کو کل طلب کر لیا گیا


اسلام آباد : احتساب عدالت نے توشہ خانہ ریفرنس کیس میں سابق وزرائے اعظم نواز شریف ،یوسف رضا گیلانی اور سابق صدر آصف زرداری کو کل طلب کر لیا۔
نیب کی جانب سے احتساب عدالت میں پیش کی گئی رپورٹ میں کہا گیا کہ آصف زرداری اور نواز شریف نے یوسف رضا گیلانی سے غیر قانونی طور پر گاڑیاں حاصل کیں، آصف زرداری نے گاڑیوں کی صرف 15 فیصد ادائیگی جعلی اکاونٹس کے ذریعے کی۔ آصف زرداری کو بطور صدر لیبیا اور یو اے ای سے بھی گاڑیاں تحفے میں ملیں یہاں تک کہ آصف زرداری نے گاڑیاں توشہ خانہ میں جمع کرانے کے بجائے خود استعمال کیں۔
نیب حکام کا موقف ہے کہ گاڑیوں کی ادائیگی عبدالغنی مجید نے جعلی اکاؤنٹس سے کی ،انور مجید نے انصاری شوگر ملز کے اکاؤنٹس کا استعمال کرکے دو کروڑ سے زائد کی غیر قانونی ٹرانزیکشنز کیں، انور مجید نے آصف زرداری کے اکاؤنٹس میں بھی 9.2 ملین روپے ٹرانسفر کئےاسکے علاوہ عبدالغنی مجید نے 37 ملین روپے کسٹم کولیکٹر اسلام آباد کو ٹرانسفر کئے۔

نیب حکام کا مزید کہنا ہے کہ نواز شریف 2008 میں کسی بھی عہدے پر فائز نہیں تھے نوازشریف کو 2008 میں بغیر کوئی درخواست دیئے توشہ خانے سے گاڑی دی گئی۔ ملزمان نیب آرڈیننس کی سیکشن نائن اے کی ذیلی دفعہ دو، چار، سات اور بارہ کے تحت کرپشن کے مرتکب ہوئے ہیں۔


Leave A Reply

Your email address will not be published.