توشہ خانہ ریفرنس: سابق وزیر اعظم کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری

اسلام آباد: احتساب عدالت نے توشہ خانہ ریفرنس میں سابق وزیراعظم محمد نواز شریف کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے ہیں۔ سابق صدر آصف علی زرداری کی حاضری سے استثنی کی درخواست منظور کر لی گئی جبکہ عدالت نے سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کو گرفتار کرنے کی نیب کی استدعا مسترد کر دی۔

احتساب عدالت اسلام آباد کے جج اصغر علی نے توشہ خانہ ریفرنس کی سماعت کی۔ نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ میاں نواز شریف کے جاتی عمرہ پرسمن کی تعمیل کی گئی۔ استدعا ہےکہ سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی اور ملزم عبدالغنی مجید کو گرفتار کیا جائے۔ میاں نواز شریف اور آصف علی زرداری کے وارنٹ گرفتاری جاری کئے جائیں۔

وکیل صفائی نے عدالت کو بتایا کہ ملزم انور مجید اسپتال میں زیر علاج ہیں انہیں سفر کرنے کی اجازت نہیں۔ چیئرمین نیب نے وارنٹ گرفتاری جاری نہیں کئے تو نیب پراسیکوٹر کیسے گرفتاری کا کہہ سکتے ہیں۔ عدالت نے ریمارکس دیئے کہ جو ملزمان آج پیش ہوئے انکی تو صرف حاضری لگے گی۔

دوران سماعت عدالت نے استفسار کیا کہ میاں نواز شریف کی طرف سے کون پیش ہوا ہے؟ جس پر نیب کی جانب سے جواب دیا گیا کہ میاں نواز شریف کی طرف سے کوئی بھی پیش نہیں ہوا۔ عدالت نے سابق صدر آصف علی زرداری کی آج حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور کرتے ہوئے حکم دیا کہ آصف علی زرداری آئندہ سماعت پر حاضری یقینی بنائیں۔ عدالت نے سابق وزیراعظم نواز شریف کے وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے۔عدالت نے یوسف رضا گیلانی اور عبدلغنی مجید کو گرفتار کرنے کی استدعا بھی مسترد کر دی۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment