شبلی فراز نے بھارت میں پاکستانی سفارتی عملے کی گرفتاری اور تشدد کو بدترین حرکت قرار دے دیا

اسلام آباد: وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز نے بھارت میں پاکستانی سفارتی عملے کی گرفتاری اور تشدد کو بدترین حرکت قرار دے دیا کہا کہ بھارتی حکومت پاکستانی ہائی کمیشن پر بے بنیاد، جھوٹے الزامات کی مہم شروع کر چکی ہے۔ بھارت کی اس مہم کا مقصد اپنے جرائم کو چھپانا ہے۔

 وزیراطلاعات سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ بین الاقوامی قوانین کے تحت پاکستانی ہائی کمیشن کوسفارتی ذمہ داریوں سےروکنا قابل مذمت ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی مہم کامقصد مقبوضہ کشمیر میں نہتےکشمیریوں کے خلاف ریاستی دہشت گردی سے توجہ ہٹانا ہے۔

انہوں نے عالمی برادری بھارتی سے مطالبہ کیا کہ وہ بھارت کے اقدام کا نوٹس لے۔ سفارتی و عالمی قانون کے منافی رویے پر بھارت کا محاسبہ کیا جائے۔

وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ بھارت میں اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کو تعصب اور پرتشدد اقدامات کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ بھارت خطے میں اپنے تمام ہمسایوں کے خلاف جارحیت کا مجرم ہے۔ بھارتی شرپسندی اورتوسیع پسندانہ سوچ نے چین کو بھی سرحد پر اپنی فوج لانے پرمجبورکردیا ہے جب کہ نیپال سے متعلق بھی اسی قسم کی خبریں میڈیا میں گردش کر رہی ہیں۔

سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ سلامتی کونسل کی قراردادوں کی خلاف ورزی بھارت کےخلاف جرائم کی فردجرم ہے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment