وفاقی حکومت عوامی حقوق اور کورونا وائرس سے تحفظ کیلئے قانون سازی کرے:سپریم کورٹ


سپریم کورٹ نے اپنے   جاری کردہ تحریری حکمنامے کہا ہے کہ وفاقی حکومت عوامی حقوق اور کورونا وائرس سے تحفظ کیلئے قانون سازی کرے،قانون سازی کیساتھ سینٹری ورکرز کو حفاظتی سامان مہیا کیا جائے۔

تحریری حکمنامے میں کہا گیا ہے کہ این ڈی ایم اے حفاظتی کٹس کی تیاری کیلئے درآمد ہونے والی مشینری کا مکمل ریکارڈ جمع کرائے،ملک بھر میں کورونا ٹیسٹ کرنے والی لیبارٹریز سے متعلق رپورٹ بھی  پیش کی جائے۔

تحریری حکمنامے میں بتایا گیا ہے کہ ٹدی دل کی صورتحال سے این ڈی ایم کی طرف سے  عدالت عظمی کو آگاہ کیا گیا ہے، این ڈی ایم اے کے مطابق سروے شدہ 26 ملین ہیکٹر ایریا میں سے 5 لاکھ ہیکٹرز پر اسپرے کیا جاچکا ہے۔

این ڈی ایم اے نمائندہ نے عدالت کو بتایا ہے کہ 4 اسپرے جہازوں میں سے صرف ایک جہاز سکھر میں فعال ہے،پائلٹس کی عدم دستیابی کے باعث تین جہاز غیر فعال ہیں،این ڈی ایم اے کی جانب سے بتایا گیا ایک جہاز ترکی سے لیز پر لیا گیا جبکہ تین ہیلی کاپٹرز اور متعدد گاڑیاں ٹدی دل کیلیے استعمال ہو رہے ہیں۔

تحریری حکمنامے میں کہا گیا ہے کہ ٹڈی دل پر سپرے کیلئے  ترکی سے لیز پر لیے گئے جہاز سے متعلق تفصیلی رپورٹ عدالت عظمی میں آئندہ سماعت تک  جمع کرائی جائے,تحریری حکمنامے میں کہا گیا ہے کہ ٹدی دل پر فوری قابو نہ پایا گیا تو ملک بھر میں  زراعت کو شدید نقصان پہنچے گا,آئندہ سماعت سے قبل ٹدی دل سے تحفظ کیلئے اقدامات پر مبنی رپورٹ بھی پیش کی جائے۔

تحریری حکمنامے میں کہا گیا ہے کہ عدالت عظمی  ہفتہ اور اتوار کو مارکیٹس کھولنے کا حکم واپس لیتی ہے،کورونا صورتحال کے مطابق مارکیٹس کھولنے سے متعلق حکومت خود پالیسی بنائے،کورونا وائرس از خود نوٹس کیس پر سماعت دو ہفتوں کے بعد ہوگی


Leave A Reply

Your email address will not be published.