وفاقی سرکاری ملازمین اپنے حقوق کے لیے سراپا احتجاج

وفاقی سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافے و مساوی حقوق کا معاملہ شدت اختیار کر گیا۔

 

وفاقی حکومت کی مبہم پالیسی پر وفاقی سرکاری ملازمین سراپا احتجاج ہو گئے، وفاقی ملازمین وزارتِ خزانہ کے سامنے دھرنے کیلئے جمع ہونا شروع ہوگئے ہیں، وفاقی سیکریٹریٹ میں علامتی قلم چھوڑ ہڑتال بھی شروع کر دی ہے۔

 

وفاقی سیکریٹریٹ کی تمام وزارتیں، محکمے اور ڈویژنز احتجاج کر رہے ہیں

 

صدر سیکرٹریٹ ایمپلائز کور کمیٹی رحمٰن باجوہ نے کہا ہے کہ ملازمین کےحقوق پر سمجھوتہ نہیں ہوگا، ھم اپنے مطالبات کی منظوری تک احتجاج جاری رکھیں گے، انکا مزید کہنا تھا کککرونا کے پیشِ نظر احتجاج میں سماجی فاصلہ برقرار رکھا جائے گا۔

 

سربراہ سیکرٹریٹ ایمپلائز کور کمیٹی کا کہنا تھا کہ 11 جون تک روزانہ وزارتِ خزانہ کے سامنے احتجاج ہوگا،اور 12 جون ڈی چوک دھرنا دیں گے۔

 

واضح رہے کہ اسلام آباد سیکرٹریٹ ملازمین گزشتہ ایک ہفتوں سے تنخواہوں میں اضافے کیلئے احتجاج کر رہے ہیں۔

 

 

متعلقہ خبریں

Leave a Comment