پاکستان نے بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان کے گمراہ کن بیان کو مسترد کر دیا،

پاکستان نے بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان کے گمراہ کن بیان کو مسترد کر دیا،ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا ہے بھارتی وزارت خارجہ کی جانب سے وزیراعظم عمران خان کے بیان کو بھی توڑ مروڑ کر حقائق کے برعکس پیش کیا گیا بھارتی کوششوں کا مقصد مقبوضہ کشمیر میں جاری مظالم سے دنیا کی توجہ ہٹانا ہے

دفتر خارجہ سے جاری بیان میں ترجمان دفتر خارجہ عائشہ فاروقی نے کہا کہ بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان کے بیان میں حقائق کو توڑ مروڑ کر پیش کیا گیا جس کو سختی سے مسترد کرتے ہیں۔

انکا مزید کہنا تھا کہ بھارتی وزارت خارجہ کی جانب سے وزیراعظم کے بیان کو بھی توڑ مروڑ کر حقائق کے برعکس پیش کیا گیا ہم بھارتی وزارت خارجہ کی اس بہیمانہ کوشش کی مذمت کرتے ہیں ،ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھابھارت کی وزارت خارجہ کے 5 جون کے بیان کا مقصد بین الاقوامی برادری کی توجہ مقبوضہ کشمیر می بھارتی ریاستی دہشت گردی سے ہٹانا ہےاس بھارتی کوشش کا مقصد دنیا کی توجہ ہٹا کر مقبوضہ کشمیر میں کشمیری عوام کے خلاف اپنے مظالم جاری رکھنا ہے۔

عائشہ فاروق کا کہنا تھا کہ کہ پاکستان دہشت گردی کا شکار ملک رہا ہےہمارے عوام کے خلاف سرحد پار سے دہشت گردی مسلط کی گئی ہمارے ہزاروں شہریوں اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے جوانوں نے دہشت گردی کے خلاف جانیں قربان کیں۔

ترجمان دفتر خارجہ عائشہ فاروقی نے کہا کہ عالمی برادری نے دہشت گردی کے خلاف پاکستان کی قربانیوں اور حصہ کو تسلیم کیا بھارتی حکام اور تجزیہ کار بارہا پاکستان کے حصوں میں عدم استحکام کو فروغ دیتے رہتے ہیں وہ اپنے نفرت انگیز خیالات کے پرچار میں پاکستان کے خلاف دہشت گردی کو ریاستی پالیسی کے طور پر استعمال کرنے کی ترغیب دیتے ہیں بھارت میں اقلیتوں اور مقبوضہ کشمیر میں جاری مظالم نے بھارتی ہندتوا سوچ کو دنیا کے سامنے بے نقاب کر دیا ہے اور وہ اپنے پاکستان مخالف پروپیگنڈے کو فروغ دینے کے لئے اقوام متحدہ سلامتی کونسل کی رپورٹ سے متعلق غلط بیانی کر رہا ہے۔

ترجمان نے واضح کیا کہ ہمیں یقین ہے کہ عالمی برادری کو گمراہ نہیں کیا جائے گا افغانستان میں جاری امن عمل کے لئے سہولت کار کے طور پر پاکستان کے کردار کو عالمی سطح پر تسلیم کیا ہے

متعلقہ خبریں

Leave a Comment