توانا پاکستان کرپشن کیس، احتساب عدالت نے فیصلہ سنا دیا


کرپشن ثابت ہونے پر احتساب عدالت احتساب عدالت اسلا م آباد میں توانا پاکستان کرپشن کیس کی سماعت ہوئی ،احتساب عدالت اسلام آباد نے کیس کا فیصلہ سنادیا

‏سابق ڈی جی تواناپاکستان منصوبہ عرفان اللہ خان پرجرم ثابت،سزاسنا دی گئی،عدالت نے سابق ڈی جی عرفان اللہ کو 7 سال قیداور 3 کروڑ جرمانے کی سزا سنائی

واضح رہے کہ کرپشن سکینڈل کی تحقیقات کے دوران انکشاف ہوا تھا کہ وزارت سوشل ویلفیئر کے کروڑوں مالیت کے ایک پراجیکٹ کے تحت صوبہ بلوچستان میں لڑکیوں کی تعلیم کے دوران انہیں مفت کھانا فراہم کرنے کا منصوبہ شروع کیا گیا، منصوبہ کا ٹھیکہ ”ویٹا مانجی برادرز“ کو سونپا گیا تاہم عملی طور پر کوئی کارروائی نہ کی گئی اور مبینہ طور میں لوٹ مار میں سابق چیف سیکرٹری بلوچستان نعیم خان اور بلوچستان حکومت کے تین دیگر افسر براہ راست ملوث پائے گئے۔

”ویٹا مانجی برادرز“ کے بورڈ آف ڈائریکٹرز نے وعدہ معاف گواہ بن کر 18کروڑ کی رقم نیب کو واپس لوٹانے کی یقین دہانی کرائی اور بعدازاں 12کروڑ نیب میں جمع کرا دیئے۔ اسوقت کی سابق اور موجودہ وفاقی وزیر زبیدہ جلال نے ابتدائی بیان نیب کوریکارڈ کروایا تھا تاہم اس کرپشن میں انکے براہ راست ملوث ہونے کے شواہد نیب کو نہیں مل سکے تھے، 

 


Leave A Reply

Your email address will not be published.