جسٹس فائز عیسیٰ کی اہلیہ جائیدادوں سے متعلق سپریم کورٹ میں وضاحت دینے کیلئے تیار

اسلام آباد ۔ جسٹس فائز عیسیٰ کی اہلیہ جائیدادوں سے متعلق سپریم کورٹ کو وضاحت دینے کیلئے تیار ہوگئیں۔

 

سپریم کورٹ کے 10 رکنی لارجر بنچ نے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی درخواستوں پر سماعت کی۔

 

جسٹس قاضی فائزعیسیٰ نے کہاکہ اہلیہ ویڈیولنک کے ذریعے موقف پیش کرناچاہتی ہیں، وہ جائیداروں کے ذرائع بتانا چاہتی ہیں، اہلیہ کہتی ہیں وہ ایف بی آرکوکچھ نہیں بتائیں گی۔

 

جسٹس قاضی فائزعیسیٰ نے کہاکہ اہلیہ کے موقف کے باوجود میں اپنی درخواست پر مقدمہ لڑوں گا، حکومتی وکیل نے کہا تھا کہ ایف بی آر والے جج صاحب سے ڈرتے ہیں۔

 

حکومتی وکیل بیرسٹر فروغ نسیم نے کہاکہ جج صاحب سےکوئی دشمنی نہیں، اگرمناسب جواب دیتے ہیں تومعاملہ ختم ہوجائےگا، جسٹس قاضی فائزعیسیٰ نے کہاکہ اہلیہ کہتی ہیں اکاؤنٹ بتانے پرحکومت نیاریفرنس نہ بنادے۔

 

دوران سماعت جسٹس عمر عطابندیال نے ریمارکس دیئے کہ ہرجج قابل احتساب ہے، عدلیہ کی ساکھ کوایک جج کے باعث متاثرنہیں ہونے دیں گے۔

 

حکومتی وکیل فروغ نسیم نے جسٹس قاضی فائزکی جائیدادوں کامعاملہ ایف بی آرکوبھجوانے پررضامند ظاہر کی اور کہاکہ ہمیں معاملہ ایف بی آر کو بھیجنے پرکوئی اعتراض نہیں ۔ وزیراعظم نے کہاہے کہ لندن میں انکی ایک پراپرٹی بھی نکلے تو ضبط کرلیں ۔

 

 

متعلقہ خبریں

Leave a Comment