سی پیک منصوبہ چین پاکستان دوستی کا منہ بولتا ثبوت ہے. عاصم سلیم باجوہ

ویب ڈیسک ۔ تفصیلات کے مطابق ایچ ایم سی اور چینی کمپنیوں کے درمیان تاریخی معاہدوں کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین سی پیک لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ عاصم سلیم باجوہ نے کہا ہے کہ ایچ ایم سی اور چینی کمپنیوں کے درمیان معاہدے تاریخی اہمیت کے حامل ہیں،ایچ ایم سی پچاس سال سے ملکی ضروریات پوری کرنے میں مصروف عمل ہے، انجیئرنگ کے شعبے میں ایچ ایم سی کا اپنا اہم کردار ادا ہے، ایچ ایم سی نے درآمدی مشینری پر بھاری زرمبادلہ خرچ کرنے سے بچانے میں اہم کردار ادا کیا ہے،انہوں نے کہا کہ پاک چین مثالی دوستی سے سب مستفید ہورہے ہیں،سی پیک ہماری آہنی بھائیوں کی دوستی کا منہ بولتا ثبوت ہے،یہ تعلقات اقتصادی تعاون اور باہمی شراکت داری میں بدل چکے ہیں،سی پیک آج دونوں ممالک کیلئے خاص اہمیت کا حامل ہے،سی پیک ہر پاکستانی کی محبت کی عکاسی کرتا ہے،ہر منصوبے کو جلد از جلد مکمل کرنے پر توجہ دی جارہی ہے،سی پیک کے منصوبوں میں ہر رکاوٹ کو دور کرکے آگے بڑھا رہے ہیں.

 

عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ یہ تاریخی موقع ہے جب ہم ملک میں صنعتی انقلاب کی بنیاد رکھ رہے ہیں،ہیوی مکینیکل کمپلیکس نے پاکستان کی ترقی میں کلیدی کردار ادا کیا،پاکستان کے انجنیئرنگ شعبے میں ایچ ایم سی نے اپنا بھرپور کردار نبھایا ہے،بھرپور محنت اور لگن سے ایچ ایم سی کی بحالی کا عمل شروع ہو چکا ہے،چین ہیوی مکینیکل کمپلیکس کی میں بہت زیادہ دلچسپی لے رہا ہے،سی پیک، پاکستان، چین آہنی بھائی چارے، قیادت کے مابین محبت کا عکاس ہے ،دونوں ممالک اقتصادی ترقی اور باہمی فوائد کیلئے آگے بڑھ رہا ہے ،انہوں نے کہا کہ پاک، چین تعلقات کسی ایک حکومت تک نہیں، سدا بہار ہیں،سی پیک پہلے مرحلے سے دوسرے مرحلے میں داخل ہو چکا ہے .

 

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے سی پیک کے پہلے مرحلے کے تمام منصوبے تیز تر اور جلد مکمل کی ہدایت کی ہے ،سی پیک کا دوسرا مرحلہ ریلوے کا مکمل ڈھانچہ تبدیل کر رہے ہیں ،1870 کلومیٹر کا ریلوے ٹریک، ریلوے کراسنگ، سگنلز سب تبدیل ہو رہے ہیں ،انہوں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ پاکستان کو جلد منافع بخش ریلوے ملے گی،پاکستان میں صنعتی ترقی، اقتصادی زونز کی بنیاد رکھ دی گئی ہے ،رشہ کئی اور دھابے جی کے اقتصادی زونز جلد شروع ہونے کا رہے ہیں،عاصم سلیم باجوہ کا مزید کہنا تھا کہ سی پیک کے دوسرے مرحلے میں داخل ہوچکے ہیں،کراچی سے پشاور تک 1800 کلومیٹر سے لمبی ریل لائن ایم ایل ون شامل ہے،حویلیاں میں ڈرائی پورٹ بنائی جائے گی،ریلوے کو اپ گریڈ کرکے منافع بخش بنایا جائے گا،ہر صوبے میں خصوصی اقتصادی زونز بنا رہے ہیں،تین اقتصادی زونز رشکئی، دھابیجی اور فیصل آباد میں بن رہے ہیں،ان تمام شعبوں میں ایچ ایم سی کا اہم کردار ادا ہوگا،مشینری اور انجینرنگ کے حوالے سے تعاون کی ضرورت ہوگی.

 

دوسرے مرحلے میں لاکھو ں جوانوں کو روزگار ملے ،ہمارے نوجوان ذہین اور محنتی ہیں،صنعتی انقلاب میں انسانی وسائل کا بہترین استعمال یقینی بنایا جائے گا،عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ سی پیک کے دوسرے مرحلے سے معیشت پر بہتر اور بھرپور مثبت اثرات ہوں گے،زراعت کی ضروریات کیلئے ایچ ایم سی سے بھاری مشینری بنوائی جائے گی،مقامی طور پر مشینری بننے سے بھاری زرمبادلہ بچے گا،سی پیک میں سائنس و ٹیکنالوجی کا خصوصی کردار ہے،کورونا وباء بھی سی پیک منصوبوں کو متاثر نہیں کرسکا،توانائی کے شعبے میں ایک منصوبہ مکمل ہوچکا اور 9 تکمیل کے مراحل میں ہیں،اربوں ڈالرز کے یہ منصوبے ملکی تقدیر بدل دیں گے،دوسرے مرحلے میں قرضوں کی بجائے بزنس معاہدوں پر توجہ ہے،انہوں نے کہا کہ مشین ٹول فیکٹری کی بھی ری ویمپنگ کی جائے گی،محنت اور اچھی توقعات سے سی پیک کی رفتار تیز کی جاسکتی ہے،آئندہ دنوں میں مزید منصوبوں بارے اطلاعات سامنے آئیں گی،سی پیک کی کامیابی میں ہر ادارے اور فرد کا کردار اہم ہے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment