سینیٹر رحمان ملک نے سنتیھا رچی بے بنیاد، من گھڑت و بیہودہ الزامات لگانے پر 5ارب ہرجانے کانوٹس بھجوادیا

اسلام آباد ۔ پاکستان پیپلز پارٹی کے سینیٹر رحمان ملک نے سنتیھا رچی کو بے بنیاد، من گھڑت و بیہودہ الزامات لگانے پر پانج ارب روپے ہرجانے کا تیسرا نوٹس بھجوادیا ہے ۔

رحمان ملک کی طرف سے بھیجے گئے نوٹس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ سنتھیا رچی نے اسلام آباد ہائی کورٹ کے باہر میڈیا کے سامنے سینیٹر رحمان ملک کیخلاف بے بنیاد، من گھڑت اور بیہودہ الزامات لگائے۔سنتھیا رچی جھوٹ پر جھوٹ بول رہی ہے اور اسکا ایک بیان دوسرے بیان کی نفی کرتا ہے، سنتھیا رچی کا الزام کہ سابق وزیراعظم بے نظیر سے متعلق باتیں انہیں رحمان ملک نے بتائیں جھوٹ و بدنیتی پر مبنی ہے، سینیٹر رحمان ملک کی سنتھیا رچی کیساتھ کبھی اسطرح کی کوئی گفتگو نہیں ہوئی ہے، سینیٹر رحمان ملک کہ اسطرح بیہودہ و غیر مہذب الزامات و گفتگو کا سوچ بھی نہیں سکتا ہے، سنتھیا رچی کی کسی بھی الزام میں کوئی حقیقت نہیں ہے بلکہ جھوٹ کا پلندہ ہے، امریکی خاتون نے من گھڑت، بے بنیاد اور نازیبا الزامات لگا کر سینیٹر رحمان ملک کی قومی و بین القوامی ساکھ مجروح کی، امریکی خاتون پندرہ دن کے اندر اپنے من گھڑت و بیہودہ الزامات اسی طرح پریس کانفرنس میں واپس لیکر غیرمشروط معافی مانگے اور پانچ ارب ہرجانہ ادا کرے۔

نوٹس کے مطابق امریکی خاتون نے سب سے پہلے محترمہ بینظیر بھٹو شہید کیخلاف نازیبا الزامات لگاکر پیپلز پارٹی سمیت ہر پاکستانی کو مجروح کیا، سینیٹر رحمان ملک نے بطور چئیرمین سینیٹ قائمہ کمیٹی داخلہ سنتھیا رچی کے محترمہ بینظیر بھٹو شہید کیخلاف الزامات پر نوٹس لیا، سنتھیا رچی نے نوٹس لینے کے ردعمل میں انکے خلاف یکے بعد دیگرے جھوٹے الزامات کا سلسلہ جاری رکھا ہے، سنیٹر رحمان ملک سنتھیا رچی کی کسی بھی بیہودہ الزام کا براہ راست جواب نہیں دینگے، سینیٹر رحمان ملک سنتھیا رچی کو عدالت کے ذریعے انصاف کے کٹہرے میں لائیں گے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment