قومی اسمبلی میں آئندہ مالی سال کے بجٹ کی منظوری کل ہو گی

اسلام آباد ۔ قومی اسمبلی کل آئندہ مالی سال کےلیے 72کھرب94ارب سے زائد کے بجٹ کی منظوری دے گی، حکومت اسے عوام دوست اور حزب اختلاف اسے غریب دشمن بجٹ قرار دے رہی ہے۔

 

بجٹ کی منظوری سے قبل وزیراعظم حکومتی اور اتحادی جماعتوں کے رہنماوں کو آج عشائیہ بھی دیں گے، بلوچستان عوامی پارٹی بھی شرکت کرے گی۔۔

 

وفاقی بجٹ 12 جون کو قومی اسمبلی میں پیش کیا گیا، 15 جون سے بجٹ پر بحث کا اغاز ہوا، تو حکومتی اراکین تعریفیں تو اپوزیشن تنقید کرتی رہی۔

 

آئندہ مالی سال 2020-21 کے وفاقی بجٹ کی منظوری پیر کو دی جائے گی۔ یہ 34کھرب روپے سے زائد خسارے کا بجٹ ہے، جس میں دفاع کی مد میں 12 کھرب 89 ارب رکھے گئے ہیں، ایف بی آر وصولیوں کا ہدف 49 کھرب 63 ارب روپے ہے۔

 

سرکاری ملازمین کی تنخواہیں بھی نہ بڑھائی جا سکیں،اپوزیشن نے اسے غیرحقیقی بجٹ قرار دیتے ہوئے یکسر مسترد کر دیا ہے جبکہ حکومت کورنا کی موجودہ صورتحال میں بجٹ کو عوام دوست اور بہترین قرار دے رہی ہے۔

 

بجٹ کی منظوری کےلیے حکومتی ٹیم ناراض اتحادیوں کو منانے کےلیے کوشاں جبکہ وزیراعظم عمران خان نے بھی پارٹی اور اتحادی جماعتوں کے رہنماوں کو آج کھانے پر بلا لیا۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment