پاکستانی اور بھارتی ہائی کمشنز نے عملے کی تعداد نصف کرنے کے معاملہ پر عملدرآمد شروع کر دیا

پاکستانی ہائی کمیشن اور بھارتی ہائی کمیشن میں عملے کی تعداد نصف کرنے کے معاملہ پر عملدرآمد شروع ہو گیا۔

 

ذرائع کے مطابق 38 افراد پر مشتمل بھارتی ہائی کمیشن کا عملہ اسلام آباد سے بھارت کے لیے روانہ ہو گیا،واپس جانے والوں میں بھارتی ہائی کمیشن کے ایک فرسٹ سیکرٹری، 2 سیکنڈ سیکرٹری اور 3اتاشی سطح کے افسران بھی شامل ہیں،دوسری جانب آج ہی 100 پاکستانی شہری بھارت سے واپس وطن بھی آئیں گے،واپس آنیوالے پاکستانیوں میں پاکستانی ہائی کمیشن نئی دہلی کے اہلکاروں کے اہلخانہ بھی شامل ہیں،ذرائع کے مطابق معاہدہ کے تحت دونوں ممالک کے درمیان ہائی کمیشن میں 110 اہلکاروں کی اجازت ہے،جبکہ عملے کی تعداد نصف کرنے کے بعد اب عملہ 55اہلکاروں پر مشتمل ہوگا۔

 

یاد رہے کچھ روز پہلے انڈیا کی طرف سے دہلی میں پاکستانی سفارتی عملے میں پچاس فیصد کمی کرنے کے فیصلے کے بعد پاکستان نے بھی اسلام آباد میں انڈیا کے سفارت خانے کو سات دن کے اندر اندر سفارتی عملے میں پچاس فیصد کٹوتی کرنے کا حکم دیا تھا۔

 

پاکستان کی وزارتِ خارجہ نے انڈیا کی طرف سے دہلی میں پاکستانی سفارت خانے کے عملے پر جاسوسی اور شدت پسندوں سے روابط قائم کرنے کے الزامات کو بھی صریحاً بے بنیاد اور لغو قرار دے کر ان کو مسترد کر دیا اور اس کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment