ادارہ شماریات نے اس سال مہنگائی کے اعدادوشمار جاری کر دیئے

پاکستان کے ادارہ شماریات نے اس سال میں مہنگائی کے اعدادوشمار جاری کر دیئے ہیں ۔

ادارہ شماریات کے مطابق اس سال جون 2020 میں مہنگائی کی شرح 8.59 فیصد تک پہنچ گئی، مئی میں مہنگائی کی شرح 8.2 فیصد تھی اورجون میں مہنگائی کی شرح 10.74 فیصد رہی۔

ادارہ شماریات کے مطابق جون میں انڈوں کی قیمت میں 21.7 اور ٹماٹر کی قیمت 13 فیصد اضافہ ہوا، اس دوران آٹا 12 فیصد اور گندم 10.83 فیصد،مسالحہ جات 5.4 فیصد اور سبزیاں 4 فیصد مہنگی ہوئیں جبکہ مئی سے جون تک پیاز 68.4 فیصد مہنگے ہوئے۔

ایک سال میں گیس چارجز 86.4 فیصد بڑھ گئے، دال مونگ 66 فیصد, آلو 62 اور دال ماش 43 فیصد مہنگی ہوئی، ایک سال میں گڑ 30.4 فیصد، چینی 29 فیصد اورسبزیاں 26 فیصد مہنگی ہوئیں جبکہ گندم 17.6 فیصد اور آٹا 15 فیصدمہنگا ہوا

ادارہ شماریات کے مطابق 2019اور 20 کے دوران شہروں کے مقابلے میں دیہاتوں میں مہنگائی میں زیادہ اضافہ ہوا

جولائی سے جون تک شہروں میں مہنگائی کی شرح 10.17فیصد اور دیہاتوں میں 11.6 فیصد، پیاز دیہاتوں میں 72.8 فیصد اور شہروں میں 68.4 فیصد ، دال مونگ دیہاتوں میں 70 فیصد اور شہروں میں 66 فیصد مہنگی ہوئی،آلو دیہاتوں میں 69 فیصد، شہروں میں 62 فیصد ، دیہاتوں میں گڑ 34 فیصد اور شہروں میں 29 فیصد ، چینی کی قیمت دیہاتوں اور شہروں میں 29 فیصد، دیہاتوں میں سبزیاں 30 فیصد اور شہروں میں 26 فیصد، گندم دیہاتوں میں 19 فیصد اور شہروں میں 17 فیصداور گندم کا آٹا دیہاتوں میں 17 فیصد اور شہروں میں 15 فیصد مہنگا ہو ا۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment