اسلام آباد ہائیکورٹ : مندر کی تعمیر کے خلاف درخواستوں پر فیصلہ محفوظ

وفاقی دارالحکومت میں مندر کی تعمیر کے خلاف درخواستوں پر اسلام آباد ہائیکورٹ نے فریقین کے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔

اسلام آباد ہائی کورٹ میں مندر کی تعمیر کے خلاف درخواستوں پر سماعت جسٹس عامر فاروق نے کی، سی ڈی اے نے عدالت کو بتایا کہ ایچ نائن ٹو میں 2016 میں پلاٹ دینے کے حوالے سے کارروائی شروع ہوئی،جسٹس عامرفاروق کے استفسار پر سی ڈی اے نے بتایا کہ ابھی معلوم نہیں لیکن مندر کا نقشہ منظوری کے لئے آیا نہیں ہے،، وزارت مذہبی امور، اسپیشل برانچ اور اسلام آباد انتظامیہ کی تجاویز کے بعد پلاٹ الاٹ کیا، تقریبا چار کنال جگہ 2017 میں الاٹ کرکے 2018 میں جگہ ہندو پنچایت کے حوالے کی۔

ڈپٹی اٹارنی جنرل راجہ خالد محمود نے موقف اپنایا کہ حکومت نے ابھی تک مندر کی تعمیر کے لیے کوئی فنڈنگ نہیں کی، عدالت نے فریقین کے دلائل کے بعد فیصلہ فیصلہ محفوظ کر لیا۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment