مولاناعبدالعزیز نے جامعہ فریدیہ پر زبردستی قبضہ کر لیا

اسلام آبادمیں نیا تنازعہ کھڑا ہو گیا، لال مسجد کے سابق خطیب مولاناعبدالعزیز نے تیرہ سال بعد اچانک جامعہ فریدیہ ای سیون کاکنٹرول حاصل کرلیا۔

 

ذرائع کا کہنا ہے کہ مولانا عبدالعزیز نے جامعہ فریدیہ کے انتظامی دفاتر پر قبضہ کرنے کے بعد جامعہ فریدیہ میں موجود اساتذہ اور دیگر عملے کو بے دخل کر دیا۔

 

اسلام آباد پولیس نے بھی موقع پر پہنچنا شروع کر دیا ہے، پولیس نے جامعہ فریدیہ کے لئے آنے جانے کے تمام راستے سیل کر دئیے، موقع پر موجود اسلام آباد پولیس کے اہلکاروں کا کہنا ہے کہ جامعہ فریدیہ کی جانب جانے کی کسی کو اجازت نہیں

 

ذرائع کے مطابق اسلام آباد میں موجود علماء نے معاملے کے حل کے لیے آپس میں مشاورت کا سلسلہ شروع کردیا ہے۔

 

یاد رہے جامعہ فریدیہ شہرِ اقتدار کے سیکٹر ای 7 میں واقع ہے، جامعہ کے منتظمین میں مولانا عبدالغفار اور مفتی فاروق شامل ہیں

متعلقہ خبریں

Leave a Comment