جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی اہلیہ کی ایف بی آر میں پیشی کی اندرونی کہانی سامنے آگئی

جسٹس قاضی فائز عیسی کی اہلیہ ایف بی آر میں پیش، بیرون ملک جائیداد سے متعلق تفصیلات ایف بی ار میں پیش کردی گئیں,تفصیلات دستاویز کی صورت میں جمع کرائی گئیں۔

تفصیلات کے مطابق جسٹس قاضی فائز عیسی کی اہلیہ نے ایف بی آر حکام کو بیرون ملک جائیداد سے متعلق تفصیلات پیش کر دیں، ایف بی ار میں پیشی کے دوران انہوں نے بتایا کہ بیرون ملک رقم قانونی طریقے سے بھیجی، انہوں نے کراچی امریکن سکول میں نوکری کے دوران آمدن کا ریکارڈ، لندن کی جائیدادوں سے ملنے والے رینٹ کی تفصیلات جمع کروا دیں۔

ذرائع کے مطابق جسٹس قاضی فائزعیسیٰ کی اہلیہ نے ایف بی آر حکام کو کراچی میں فروخت کردہ املاک، کراچی کلفٹن میں خریدی گئی پراپرٹی اور اس پر جمع کرایا گیا ٹیکس ریکارڈ، والد کی جانب سے تحفہ میں ملنے والی زرعی زمین کی تفصیلات ، ڈیرہ مراد جمالی اور نصیر آباد کی زرعی زمین کی تفصیلات ، بیرون ملک رقم بھیجنے کے لئے ڈالر اور پائونڈ بنک اکائونٹس کی تفصیلات جمع کروا دیں۔

ایف بی آر حکام کے سامنے جسٹس قاضی فائز عیسی کی اہلیہ نے موقف اپنایا کہ انہوں نے سٹینڈرڈ چارٹرڈ بنک کے اکاؤنٹ سے تقریبا سات لاکھ پاونڈز بھجوائے، جبکہ مرکزی بنک کے پاس میرے تمام بنک ٹرانزیکشن کی تفصیلات موجود ہیں۔

انکا مزید کہنا تھا کہ برطانیہ(لندن) میں خریدی گئی جائیداد سے میرے شوہر کا کوئی تعلق نہیں ہے، انہوں نے لندن کی تینوں جائیدادیں گزشتہ سال کے ٹیکس گوشوارے میں ظاہر کردیئے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment