اسلام آباد پمز ہسپتال میں خاتون مریض کے ساتھ ڈاکٹر کا ہتک آمیز رویہ

کوروناوائرس میں دن رات مریضوں کی خدمت کرنے کے بعد ایک طرف ہیلتھ کئیر ورکرز کو قوم کا سلام تو دوسری جانب ڈاکٹرز کی مریضوں سے بدسلوکی بھی بڑھ گئی۔

ذرائع کے مطابق وفاقی دارالحکومت کے پمز اسپتال میں ڈاکٹرز کا مریضوں کے ساتھ ناروا سلوک بڑھنے لگ گیا ہے، پمز اسپتال کے گائنی وارڈ کی لیڈی ڈاکٹر زہرہ نے خاتون مریضہ سے ہتک آمیز رویہ اپنایا، گائینی وارڈ فنکشنل ہونے کے باوجود آرام پسند لیڈی ڈاکٹر زہرہ نے مریض کا علاج کرنے سے انکار کر دیا۔

پمز ہسپتال میں مریضہ سے بدتمیزی کرنے کی ویڈیو میں خاتون ڈاکٹر مریضہ پر زور زور سے چلاتی ہوئی دیکھی جاسکتی ہیں۔

ویڈیو میں خاتون ڈاکٹر کا مریضہ کو عجیب منطق دیتے ہوئے سنا جا سکتا ہے کہ کورونا کی وجہ سے ہم کیسز نہیں لیں گے، جس نے بھیجا ہے اسکو جا کے علاج کا کہیں۔

ذرائع کے مطابق مریضہ کا علاج کرنے سے انکار کرنے والی گائنی وارڈ میں موجود لیڈی ڈاکٹر زہرہ گائنی ہیڈ کی بہو ہیں، ڈاکٹر زہرہ کا گائنی ہیڈ کی بہو ہونے کی وجہ سے اسپتال انتظامیہ بھی ڈاکٹر زہرہ کے خلاف کوئی ایکشن نہیں لیتی۔

ذرائع کے مطابق خاتون ڈاکٹر کے ناروا سلوک کی وجہ سے روزانہ کی بنیاد پر پمز ہسپتال سے نجی ہسپتالوں میں جانے پر مجبور ہیں۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment