وفاقی وزیر تعلیم نے آن لائن تعلیمی مسائل پر صوبوں سے سفارشات مانگ لیں

اسلام آباد: وفاقی وزیر تعلیم و پیشہ وارانہ تربیت شفقت محمود نے ، وزیر اعظم پاکستان کی ہدایت پر طلبہ کو درپیش آن لائن لرننگ کے مسائل اور انٹر نیٹ ربط سازی کو مزید بہتر کرنے کے لئے، اعلی سطحی اجلاس کی صدارت کی۔ اجلاس میں پی ٹی اے، وزارت آئی ٹی، یونیورسل سروس فنڈ، ایچ ای سی اور وزارت تعلیم کے اعلی عہدیداران نے شرکت کی۔

 

اجلاس میں طلبہ کو درپیش آن لائن تعلیمی مسائل کی مختلف جہتوں کا جائزہ لیا گیا۔ گلگت بلتستان، آزاد کشمیر، جنوبی بلوچستان اور قبائلی علاقوں میں انٹرنیٹ کی کم دستیابی پر بھی تفصیلی بات چیت ہوئی۔ موجودہ انٹر نیٹ کی سروس کوالٹی کو بہتر بنانے پر بھی سیر حاصل گفتگو ہوئی۔ اس موقع پر پی ٹی اے، وزارت آئی ٹی، اور یو ایس ایف نے مسائل اور انکے حل کے لئے اپنا اپنا موقف پیش کیا۔

 

وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا کہ کہ عصر حاضر میں تعلیم و انٹرنیٹ لازم و ملزوم ہو چکے ہیں مگر کووڈ 19 کے تناظر میں طلبہ کے لئے انٹر نیٹ کی اہمیت اور ضرورت اور زیادہ ناگزیر ہو چکی ہے۔

 

وفاقی وزیر تعلیم نے ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ صوبوں اور دیگر اسٹیک ہولڈرز سے آن لائن لرننگ کے مسائل اور انکے حل کے لئے جلد از جلد مشاورت کا عمل مکمل کر کے حتمی سفارشات کی رپورٹ تیار کی جائے جو وزیر اعظم اور کیبنٹ کو پیش کی جائے گی۔ شفقت محمود نے کہا کہ تعلیم موجودہ حکومت کی اولین ترجیحات میں ہے اور تعلیمی مسائل کے حل کے لئے کوئی دقیقہ فروگزاشت نہیں چھوڑیں گے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment