بھارتی جاسوس کلبھوشن کو قونصلر رسائی دے دی گئی

بھارت کو کلبھوشن تک قونصلر رسائی دے دی گئی، رسائی اسلام آباد کے محفوظ اور خفیہ مقام پر دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان میں جاسوسی کے الزام میں پکڑے جانے والے بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کو کونسلر رسائی دے دی گئی ہے، بھارت کے پاکستان میں ناظم الامور گورو اہلووالیا کی کلبھوشن سے ملاقات ہوئی ہے، یہ ملاقات ایک خفیہ مقام پر کروائی گئی، دوران ملاقات کلبھوشن نظر ثانی پٹیشن پر دستخط کرنے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔

 

یہ پیش رفت ایسے وقت ہوئی ہے جب بھارت نے یادیو تک قونصلر رسائی کے لیے پاکستان کو از سر نو درخواست دیتے ہوئے حکومت پاکستان سے کہا تھا کہ اسے کلبھوشن یادیو تک بلا روک ٹوک اور کسی پابندی کے بغیر قونصلر رسائی کی اجازت دی جائے۔

 

خیال رہے کہ پاکستان نے یادیو کو سزائے موت پر نظرثانی کی درخواست دائر کرنے کے لیے آخری تاریخ 20جولائی مقرر کی ہے۔

 

یاد رہے کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو بھارتی بحریہ کا  حاضر سروس آفسر ہے جسے 2016 میں صوبہ بلوچستان سے گرفتار کیا گیا تھا، جس کے بعد پاکستان کی ایک فوجی عدالت نے اپریل 2017 میں کلبھوشن یادیو کو جاسوسی، تخریب کاری اور دہشت گردی کے الزامات میں موت کی سزا سنائی تھی۔ اس فیصلے کے خلاف بھارت نے مئی 2017 میں عالمی عدالت انصاف کا دورازہ کھٹکھٹایا تھا اور استدعا کی تھی کہ کلبھوشن یادیو کی سزا معطل کرکے ان کی رہائی کا حکم دیا جائے، عالمی عدالت نے بھارت کی یہ اپیل مسترد کر دی تھی تاہم پاکستان کو حکم دیا تھا کہ وہ ملزم کو قونصلر رسائی دے اور ان کی سزائے موت پر نظرِ ثانی کرے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment