وزیر اعظم کے معاونین خصوصی اور مشیروں کے اثاثے ظاہر کر دئیے گئے

وزیراعظم عمران خان کے معاونین خصوصی اور مشیروں نے اپنے اثاثے ظاہر کر دئیے ہیں۔

 

وزیراعظم کے مشیر اطلاعات شبلی فراز نے سوشل میڈیاپر ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ معاونین خصوصی اور مشیروں کے اثاثوں کی تفصیلات وزیر اعظم کی ہدایات پر  ظاہر کی گئی ہیں۔

 

جاری دستاویزات کے مطابق مشیر تجارت عبدالرزاق داوَد کے اثاثوں کی مالیت ایک ارب 75کروڑ 68لاکھ سے زائد ہے، مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ کے اثاثوں کی مالیت 29کروڑ70لاکھ ہے۔

 

وزیراعظم عمران خان کے مشیر برائے موسمیاتی تبدیلی ملک امین اسلم کے اثاثوں کی ملکیت ایک کروڑ40لاکھ 48ہزار روپے ہے۔

 

جاری دستاویزات کے مطابق وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے سماجی تحفظ اور احساس پروگرام کی چیئرپرسن ڈاکٹر ثانیہ نشتر کے اکاوَنٹ میں 6لاکھ 47ہزار853روپے ہیں۔

 

وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی شہبازگل کے مجموعی اثاثے 11کروڑ سے زائد ہیں، اور امریکا کے گرین کارڈ ہولڈر بھی ہیں۔وزیر اعظم کے معاونِ خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر کے اثاثے 5کروڑ روپے سے زائد ہیں۔وزیراعظم کے 15 معاون خصوصی میں سے 6 کی دہری شہریت ہے۔

 

دستاویزات کے مطابق وزیراعظم کے ترجمان ندیم افضل چن کینیڈین شہری اور ندیم بابر امریکی شہری، ذوالفقارعلی بخاری برطانوی شہری اور شہزادہ سید قاسم امریکی شہری ہیں۔

 

جاری دستاویزات کے مطابق زلفی بخاری کے پاس پاکستان میں کوئی اثاثہ نہیں ہے، لندن میں اربوں روپے کے اثاثے ہیں۔

 

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے اطلاعات جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ 15 کروڑ روپے کے اثاثوں کے مالک ہیں اور ان کے پاس گلبرگ گرین، اسلام آباد میں سات کروڑ روپے مالیت کا پانچ کنال کا مکان بھی ہے۔ اس کے علاوہ وہ رحیم یار خان اور بہاولپور میں 65 ایکڑ اراضی کے بھی مالک ہیں، جبکہ کراچی، لاہور اسلام آباد میں ان کے پاس پانچ پلاٹس بھی ہیں۔ ان کے بینک اکاونٹ میں تقریبا تین لاکھ روپے کے علاوہ چار ہزار سے زیادہ ڈالرز بھی ہیں۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment