سینیئر صحافی مطیع اللہ جان بازیاب ہوگئے

گزشتہ روز اغواء ہونے والے سینیئر صحافی مطیع اللہ جان بازیاب ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی اور مبینہ طور پر اغوا ہونے مطیع اللہ جان بازیاب ہو گئے، میڈ یا رپورٹس کے مطابق اغوا کار سینئر صحافی مطیع اللہ جان کو رات گئے فتح جنگ کے قریب چھوڑ گئے جہاں سے وہ اپنے بھائی کے ساتھ گھر کے لیے روانہ ہو گئے، مطیع اللہ جان کی صحت کے حوالے سے نجی ٹی وی کا دعویٰ ہے کہ وہ بالکل ٹھیک ہیں اور بظاہر ان پر کسی قسم کے تشدد کا نشان نہیں ہے تاہم انہیں اغوا کار کہاں لے کر گئے اور ان کے کیا مطالبات تھے اس حوالے سے تفصیلات فلحال سامنے نہیں آئیں۔

گزشہ روز سے سوشل میڈیا پر مطیع اللہ جان کو زبردستی ایک گاڑی میں بٹھا کر لے جانے کی دو ویڈیوز بھی گردش کر رہی ہیں۔

گزشتہ روز چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ جسٹس اطہر من اللہ نے سینیئر صحافی مطیع اللہ جان کو بازیاب کرانے کا حکم دیا تھا اور متعلقہ حکام سے کہا تھا کہ اگر سینیئر صحافی مطیع اللہ کو بازیاب نہیں کرایا جا سکا تو حکام بدھ کو ذاتی حیثیت میں پیش ہوں۔

یاد رہے کہ گزشتہ صبح دس بجے کے قریب وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں گرلز سکول کے سامنے سے نا معلوم افراد نے زبردستی سینئر صحافی مطیع اللہ جان کو اغواء کر کے لے گئے تھے جس کے بعد ملک بھر کی صحافتی، سیاسی، سماجی اور حکومتی وزراءنے مطیع اللہ جان کے مبینہ اغوا پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے حکومت سے ان کی فوری بازیابی کا مطالبہ کیا تھا۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment