ملائشین ایئرلائنز میں کام کرنے والے پاکستانی پائلٹس کے لائسنس درست قرار

پاکستانی پائلٹس کے مشکوک لائسنس کا معاملہ، ملائشین ایئرلائنز میں کام کرنے والے پاکستانی پائلٹس کے لیے اچھی خبر آ گئی۔

تفصیلات کے مطابق ملائشین ایئرلائنز میں کام کرنے والے پاکستانی پائلٹس کے لیے اچھی خبر آ گئی، پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی نے ملائشیا میں کام کرنے والے 18 پائلٹس کے لائسنس کودرست قرار دے دیا، سول ایوی ایشن اتھارٹی آف ملائشیا نے تمام گراؤنڈ کیے گئے پاکستانی پائلٹس کو بحال کردیا۔

سی اے اے ایم نے 18 پاکستانی پائلٹس کے لائسنس کی تصدیق کے لیے سی اے اےحکام کو خط لکھا تھا، چیف ایگزیکٹیو آفیسر سول ایوی ایشن اتھارٹی آف ملائشیا نے پائلٹس بحالی کا نوٹیفیکیشن جاری کردیا۔

یاد رہے وفاقی وزیر برائے ہوابازی جناب غُلام سرور صاحب نے قومی اسمبلی کے فلور پر پی آئی اے کے طیارہ 8303 کے حادثے کی اِبتدائی یا عبوری رپورٹ دیتے ہُوئے ایک بیان جاری کِیا تھا کہ پی آئی اے کے تیس فیصد پائلٹس کی ڈگریاں یا لائیسینس جعلی ہیں، جس کے بعد یورپی ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی سمیت کئی ملکوں نے پی آئی اے کا فضائی آپریشن عارضی طور پر معطل کر دیا تھا، غیر ملکی ائیر لائنز میں کام کرنے والے پاکستانی پائلٹس کو بھی اس پابندی کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

Leave a Comment