صدر مملکت کا یوم استحصال کشمیر کے حوالے سے سینٹ کا اجلاس کل طلب

اسلام آباد(04اگست2020)ء صدر مملکت نے”یوم استحصال کشمیر“ کے حوالے سے سینیٹ کا خصوصی اجلاس 5 اگست بروزبدھ کی صبح 10:30 طلب کیا ہے۔

ایوان بالاء کے خصوصی اجلاس کے دوران مسئلہ کشمیر کے حوالے سے پارلیمان اور عوام کی جانب سے مظلوم کشمیریوں کے حق میں ہر سطح پر آواز اٹھانے کے عزم کا اعادہ کیا جائے گا اور کشمیریوں کی حق خود ارادیت کے علاوہ بھارت کے زیر تسلط کشمیر میں قابض بھارتی فوج کی جانب سے ڈھائے جانے والے مظالم کے خلاف بھی آواز اٹھائی جائی گی۔

اس موقع پر بین الاقوامی برادری پر زور دیا جائے گا کہ وہ بھارت کے زیر تسلط کشمیر میں بھارتی فوج کی جانب سے ڈھائے جانے والے مظالم بند کروانے کیلئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے۔ ایوان بالاء کا یہ خصوصی اجلاس کشمیر کے حوالے سے یک نقطی ایجنڈے پر ہو گا جس دوران سینیٹ میں موجود سیاسی جماعتوں کے پارلیمانی رہنما بحث میں حصہ لیں گے۔یہ اجلاس اس حوالے سے بھی تاریخی اہمیت کا حامل ہے کہ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی اجلاس سے خطاب کریں گے۔

اس موقع پر پاکستان اور آزاد کشمیر کے جھنڈے بھی ایوان میں رکھے جائیں گے۔ اجلاس کی کاروائی دیکھنے کیلئے مختلف ممالک کے سفیروں اور ہائی کمشنروں کو خصوصی طور پر دعوت دی گئی ہے۔اس اجلاس کے موقع پرایک خصوصی کتابچہ بھی تیار کیا گیا ہے جس میں ایوان بالاء کی جانب سے کشمیر کے حوالے سے کی جانے والی کاوشوں بلخصوص گزشتہ سال سینیٹ کے زیر انتظام منعقد ہونے والی کشمیر کانفرنس کے مندرجات، مقبوضہ کشمیر میں بھارتی حکومت اور قابض بھارتی فوج کی جانب سے ڈھائے جانے والے مظالم صدر مملکت کے خطاب کی تفصیل اور سینیٹ کی جانب سے منظور کی جانی والی مشترکہ مذمتی قرارداد شامل ہونگے۔

یہ کتابچہ دنیا بھر کے 56ہزار اراکان پارلیمنٹ اور بین الاقوامی انسانی حقوق کی تنظیموں کو بھجوایا جائے گا۔اراکان سینیٹ کشمیر کے حوالے سے شاہرہ دستور پر 5اگست کو ہونے والے خصوصی واک میں بھی شرکت کریں گے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment