اسرائیل سے امن معاہدے کے بعد فلسطین نے یو اے ای سے سفیر واپس بلا لیا

فلسطین نے متحدہ عرب امارات (یو اے ای) سے سفارتی تعلقات معطل کرنے کے بعد اپنا سفیر واپس بلا لیا ہے۔


فلسطین نے اسرائیل اور یو اے ای کے درمیان معاہدے کے بعد احتجاجاً سفارتی تعلقات معطل کیے ہیں۔ یو اے ای اور اسرائیل کے درمیان ہونے والے معاہدے پر اپنے ردعمل میں فلسطینی اتھارٹی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ یو اے ای کے اس اقدام کے ذریعے الاقصیٰ، بیت المقدس اور فلسطینی کاز کو دھوکا دیا گیا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ کسی کو فلسطینیوں کے امور میں مداخلت کی اجازت نہیں دیں گے۔

اس سے قبل ترکی نے بھی یو اے ای سے سفارتی تعلقات معطل کرنے کی دھمکی دی ہے۔ ترک وزیر خارجہ کا کہنا ہے کہ ھم فلسطینی مسلمانوں کے ساتھ ہیں۔

ایرانی وزارت خارجہ نے امن معاہدے پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ فلسطین کےمظلوم عوام اور دنیا کی تمام آزاد قومیں غاصب اسرائیلی حکومت کے ساتھ تعلقات بحالی کو کبھی معاف نہیں کریں گی۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment