عامر خان کی ترک خاتون اول سے ملاقات پر بھارتی سیخ پا ہو گئے

بھارتی مسلمان فلم سٹار عامر خان کی ترک خاتون اول ایمینے اردوغان سے ملاقات کی تصاویر منظر عام پر آنے کے بعد بھارتی انتہاپسند سیخ پا ہوگئے 

ترک خاتون اول ایمینے اردوغان نے 15 اگست کو عامر خان کے ساتھ ملاقات کی تصاویر ٹوئٹر پر شیئر کرتےہوئے لکھا ‘میں نے استنبول میں عالمی شہرت یافتہ اداکار، ہدایتکار اور فلمساز عامر خان سے ملاقات کی۔ مجھے یہ جان کر خوشی ہو رہی ہے کہ عامر اپنی نئی فلم ‘لال سنگھ چڈھا’ کی شوٹنگ ترکی کے مختلف علاقوں میں کر رہے ہیں۔

ذرائع کے مطابق عامر خان نے ترک خاتون اول کو اپنء فلم کے سیٹ پر آنے کی دعوت بھی دی ہے۔

ایمینے اردوغان سے عامر خان کی ملاقات بھارتی انتہا پسندوں کو پسند نہ آئی۔ شدت پسندوں نے اس ملاقات کے بعد عامر خان کو ملک دشمن قرار دے دیا ۔

انتہا پسند بھارتیوں نے کہا کہ مسٹر پرفیکٹ پہلے اپنی فلموں میں ہندو مخالف مواد دکھاتے رہے ہیں اور اب بھارت کے دشمنوں سے ملاقاتیں بھی کر رہے ہیں۔

یاد رہےترکی پاکستان کا دیرینہ دوست ہے، اور اردوغان کی پاکستان سے محبت کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہے۔ ترکی سے بھارتیوں کی ناراضگی کی ایک وجہ تو یہ ہے کہ اس نے انڈیا کے زیر انتظام جموں و کشمیر سے متعلقہ آرٹیکل 370 کو ختم کرنے کی مخالفت کی تھی۔

اس وقت ترکی کے صدر نے رجب طیب اردوغان نے کہا تھا کہ ہمارے کشمیری بھائی بہن کئی عشروں سے تکلیف میں ہیں، کشمیر کے معاملے میں ہم ایک بار پھر پاکستان کے ساتھ ہیں۔ ہم نے یہ مسئلہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں اٹھایا۔ مسئلہ کشمیر جنگ سے حل نہیں کیا جاسکتا اسے عدل و انصاف کے ساتھ حل کیا جاسکتا ہے۔ اس طرح کا حل سب کے حق میں ہے۔ ترکی انصاف، امن اور بات چیت کی حمایت کرتا رہے گا۔اُس وقت بھارت نے ترکی کے اس موقف پر سخت اعتراض کیا تھا۔ 

متعلقہ خبریں

Leave a Comment